The news is by your side.

Advertisement

سرفراز الیون کا پلٹ کر وار، جنوبی افریقہ ورلڈ‌ کپ سے باہر

لندن: ورلڈ کپ 2019 کے 30ویں میچ میں پاکستان نے جنوبی افریقہ کو 49 رنز سے شکست دے کر ورلڈ کپ سے باہر کردیا، شاداب خان اور وہاب ریاض نے تین، محمد عامر دو وکٹیں حاصل کیں۔

تفصیلات کے مطابق لارڈز میں کھیلے جانے والے میچ میں پاکستان کی جانب سے دیے جانے والے 309 رنز ہدف کے تعاقب میں جنوبی افریقہ کی ٹیم مقررہ اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 259 رنز بناسکی، فاف ڈوپلیسی کی نصف سنچری بھی ٹیم کو شکست سے نہ بچاسکی۔

محمد عامر نے ہاشم آملہ کو پہلے ہی اوور میں پویلین بھیج دیا، آملہ نے 2 رنز بنائے تھے، ڈی کوک نے حفیظ کی گیند پر کیچ ڈراپ ہونے کے بعد 47 رنز کی اننگز کھیلی۔

کپتان فاف ڈوپلیسی نے 63 رنز کی اننگز کھیلی، ایڈم مرکرم کو 7 رنز پر شاداب خان نے نشانہ بنایا، وینڈر ڈوسن 36 رنز بنا کر شاداب کی گیند پر حفیظ کو کیچ دے بیٹھے۔

ڈیوڈ ملر تین چانس ملنے کے باوجود بڑی اننگز نہ کھیل سکے اور 31 رنز پر شاہین آفریدی کی گیند پر بولڈ ہوئے، کرس مورس 16، ربادا 3 اور نگیڈی 1 رن پر وہاب ریاض کا نشانہ بنے۔

واضح رہے کہ جنوبی افریقہ کے لیے یہ میچ جتنا انتہائی اہم تھا شکست کے ساتھ ہی ورلڈ کپ میں پروٹیاز کا سفر تمام ہوگیا ہے، ایونٹ کے بقیہ میچز جنوبی افریقہ کھیلے گی۔

اس سے قبل ورلڈکپ کے 30ویں میچ میں پاکستان اور جنوبی افریقا کی ٹیمیں لارڈز کے اسٹیڈیم میں مد مقابل ہیں، دونوں ٹیموں کے لیے آج کا میچ انتہائی اہم ہے کیونکہ شکست کی صورت میں آگے کا سفر دشوار ہوجائے گا۔

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا اعلان کیا، پاکستان کی جانب سے فخر زمان اور امام الحق میدان میں آئے اور انہوں نے انتہائی محتاط انداز سے پروٹیز گیند بازوں کا سامنا کیا۔

جنوبی افریقا کے خلاف میچ میں قومی ٹیم میں دو تبدیلیاں کی گئیں، آل راؤنڈر شعیب ملک کی جگہ حارث سہیل اور فاسٹ باؤلر حسن علی کی جگہ شاہین آفریدی کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

پاکستان کی اننگز

اننگز کے پندرہویں اور عمران طاہر نے اپنے پہلے اوور میں فخر زمان کو چوالیس کے انفرادی جبکہ 81 کے مجموعی اسکور پر پویلین بھیجا، پندرہویں اوور کے اختتام تک ایک چھکا اور 11 چوکے لگے۔

پاکستان کے دوسرے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی امام الحق تھے جو 98 کے مجموعی اسکور پر 44 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے، محمد حفیظ نے محتاط انداز سے کھیلنے کی کوشش کی مگر وہ بھی 143 کے مجموعی جبکہ 20 کے انفرادی اسکور پر آؤٹ ہوئے۔

بعد ازاں بابر اعظم اور حارث سہیل نے شاندار بیٹنگ کرتے ہوئے چوتھی وکٹ میں 81 رنز کی شراکت داری قائم کی اور ٹیم کی پوزیشن کو مضبوط بنایا، دونوں بلے بازوں نے اسی دوران اپنی اپنی نصف سنچریاں بھی مکمل کیں، اننگز کے 41.2 اوور میں بابر اعظم 69 رنز بناکر پویلین لوٹے یوں 224 پر پاکستان کے چار کھلاڑی آؤٹ ہوچکے تھے۔

نئے آنے والے بیٹسمین عماد وسیم 23 رنز بنا سکے جبکہ وہاب چار رنز بناکر آؤٹ ہوئے، حارث سہیل آخری اوور کی چوتھی گیند پر 89 رنز کی شاندر اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے، انہوں نے 59 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے 3 چھکے اور 9 چوکے لگائے۔

پاکستان نے مقررہ پچاس اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 308 رنز اسکور کیے، حارث سہیل 89 رنز کے ساتھ نمایاں بلے باز رہے جبکہ بابر اعظم نے 69، فخر زمان اور امام الحق نے 44 ، 44 رنز کی انگز کھیلی۔ جنوبی افریقا کے باؤلر نگیڈی تین اور عمران طاہر دو وکٹیں حاصل کر کے نمایاں باؤلر رہے۔

پوائنٹس ٹیبل

ایونٹ میں جنوبی افریقا کی ٹیم اب تک 6 میچز کھیل چکی ہے جن میں سے ایک میں کامیاب جبکہ 4 میچز میں ناکام رہی ہے جبکہ پاکستان ایک ہی میچ میں کامیابی حاصل کرسکی ہے۔ پوائنٹ اسکورنگ ٹیبل پر اس وقت جنوبی افریقا آٹھویں جبکہ پاکستان نویں نمبر پر ہے۔

واضح رہے کہ آئی سی سی ورلڈکپ کے لیے 10 ٹیمیں ایونٹ میں حصہ لے رہی ہیں جنہیں 2 گروپس میں تقسیم کرنے کے بجائے تمام ٹیمیں ایک دوسرے کے خلاف میچ کھیلیں گی۔

ایونٹ میں دفاعی چیمپیئن آسٹریلیا، بھارت، پاکستان، انگلینڈ، نیوزی لینڈ، جنوبی افریقہ، ویسٹ انڈیز، بنگلہ دیش، سری لنکا اور افغانستان شامل ہیں۔

آئی سی سی ورلڈکپ کے ایونٹ میں 48 میچز کھیلے جائیں گے، فائنل اور سیمی فائنل سے قبل تمام ٹیمیں 9،9 میچز کھیلیں گی جن میں سے 4 ٹیمیں سیمی فائنل میں جگہ بنائیں گی، 14 جولائی کو فائنل کھیلا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں