site
stats
عالمی خبریں

پاکستانی یاسر نقوی کینیڈا کے صوبہ کا اٹارنی جنرل مقرر

ٹورانٹو: پاکستانی نژاد کینیڈین شہری یاسر نقوی کو کینیڈا کے سب سے زیادہ آبادی والے صوبے کا اٹارنی جنرل مقرر کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی سے تعلق رکھنے والے 42 سالہ کینیڈین شہری یاسر نقوی وہ پندرہ برس کی عمر میں 1988 میں والدین کے ہمراہ کینیڈا ہجرت کر گئے تھےپیشے کے اعتبار سے وکیل یاسر نقوی کا تعلق کینیڈا کے صوبے انٹاریو کی حکمراں جماعت لبرل پارٹی ہے۔

دورانِ وکالت بھی یاسر نقوی سیاسی میدان میں بھی متحرک رہے جس کی بناء پر انہیں کینیڈین کمیونٹی کی خدمات اور سیاست کے میدان میں کئی اعزازات سے نجی اور سرکاری طور پر نوازا گیا۔

پاکستانی نژاد کینیڈین یاسر نقوی 2007 ء میں پہلی بار لبرل پارٹی کے ٹکٹ پر صوبائی اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے اوراس کے بعد مسلسل جیت سے ہمکنار ہوتے چلے آئے ہیں۔

کینیڈا کے دارالحکومت ٓاٹوا سے انتخابات میں رکن صوبائی اسمبلی منتخب ہونے والے یاسر نقوی اس سے قبل وزیر محنت اور وزیر تحفظ کمیونٹی و جیل خانہ جات اور گورنمنٹ ہاوس کے لیڈر کے فرائض سر انجام دے چکے ہیں۔

اُن کی انہی اعلیٰ خدمات کے عوض حکمراں جماعت لبرل پارٹی نے انہیں انٹاریو کا اٹارنی جنرل منتخب کیا ہے، کسی پاکستانی کیلئے اٹارنی جنرل کے عہدے پر فائز ہونا بڑے اعزاز کی بات ہے،کینیڈا میں مقیم پاکستانیوں نے یاسر نقوی کے اٹارنی جنرل بننے پر خوشی کا اظہار کیا ہے۔

یاد رہے کہ انٹاریو صوبہ آبادی کے لحاظ سے کینیڈا کا سب سے بڑا صوبہ ہے جس کی آبادی بارہ کروڑ کے لگ بھگ ہے،اس صوبے میں پاکستانیوں کی کثیر تعداد آباد ہے۔

واضح رہے پاکستانی نژاد کینیڈین شہری یاسر نقوی اٹارنی جنرل منتخب ہونے کے باوجود گورنمنٹ ہاوس کے لیڈر کے فرائض بھی سر انجام دیتے رہیں گے۔

اس سے قبل پاکستانی نژاد برطانوی شہری صادق خان پہلے مسلم میئر برائے لندن کے فرائض انجام دے رہے ہیں،اور ایسی کئی اور قبلِ تقلید مثالیں دنیا بھر پاکستان کی نیک نامی کا باعث بن رہی ہیں جو کہ نہایت خوش آئند بات ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top