site
stats
اہم ترین

پارہ چنار میں دو دھماکے‘ 20 شہید، 70 زخمی

پارہ چنار: کرم ایجنسی میں دو خود کش دھماکے ہوئے ہیں جس کے نتیجے میں بیس افراد شہید ہوئے ہیں جبکہ 70 سے زائد افراد افراد زخمی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پارہ چنار کے علاقے اکبرمارکیٹ کے مرکزی علاقے میں دو خود کش دھماکے ہوئے ہیں، رکن قومی اسمبلی ساجد حسین طوری نے کہاہے کہ پہلے ایک پھر دوسرے خودکش بمبار نے خود کواڑا لیا، دوسرا دھماکا امدادی کارروائیوں کے دوران کیا گیا۔

پارہ چنار کے پولیٹیکل ایجنٹ نے سانحے میں بیس افراد کے شہید ہونے کی تصدیق کی ہے‘ اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے اور ریسکیو ادارے جائے وقوعہ پر پہنچ گئے ہیں‘ میتوں اور زخمیوں کو مختلف اسپتالوں میں منتقل کیا جارہا ہے۔

آرمی ہیلی کاپٹر روانہ


پاک فوج کے دو آرمی ایوی ایشن ہیلی کاپٹر پارہ چنار کے لیے روانہ کردیئے گئے ہیں۔ آئی ایس پی آر کے مطابق یہ ہیلی کاپٹر شدید زخمیوں کو جلد از جلد پشاور منتقل کریں گے۔

پی ٹی آئی کے رہنما شوکت یوسف زئی نے اے آروائی نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عید کا دن قریب ہے اور بازاروں میں رونق ہے جسے دہشت گردوں نے نشانہ بنایا ہے۔

قانون نافذ کرنے والے ادارے اور بم ڈسپوزل اسکواڈ کے افراد جائے وقوعہ پر پہنچ گئے ہیں اور شواہد کی تلاش جاری ہے۔

کوئٹہ میں دھماکہ


 یاد رہے کہ آج صبح کوئٹہ میں بھی ایک گاڑی دھماکے سے پھٹ گئی تھی جس کے نتیجے میں 20 افراد شہید جبکہ متعدد زخمی ہوئے تھے۔

 صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں آئی جی آفس کے سامنے شہدا چوک پر زور دار دھماکے کے نتیجے میں بیس افراد جاں بحق 70زخمی ہوگئے تھے‘ سیکیوٹی فورسز کے مطابق یہ گاڑی کسی بڑی کارروائی میں استعمال ہونی تھی تاہم راستے میں ہی دھماکہ ہوگیا اور شہر بڑی تباہی سے بچ گیا۔

اس سے قبل رواں سال مارچ میں جمعے ہی کے دن پارہ چنار کے علاقے نور مارکیٹ میں دھماکا ہوا تھا‘  پولیٹیکل انتثظامیہ ذرائع کے مطابق یہ کار بم دھماکہ تھا۔ بم دھماکے میں جاں بحق افراد کی تعداد 70 ہوگئی، درجنوں افراد زخمی ہیں جن میں بچے اور خواتین بھی شامل ہیں۔

وزیر اعظم اور دیگر سیاسی رہنماؤں کا اظہار مذمت

وزیر اعظم نواز شریف، صدر مملکت ممنون حسین، وزیر داخلہ چوہدری نثار، امیر جماعت اسلامی سراج الحق، لیاقت بلوچ، ڈاکٹرمحمد طاہر القادری، گورنرخیبرپختونخوا انجینئراقبال ظفرجھگڑا، چیئرمین پی ایس پی سید مصطفی کمال اور دیگر نے پارا چنار میں خود کش دھماکوں کی مذمت اور دھماکے میں شہید افراد کے درجات کی بلندی اور زخمی ہونے والوں کی جلد صحت یابی کیلئے دعا کی ہے۔

وزیراعظم نوازشریف نے ہدایت کی کہ حالیہ واقعات کے پیش نظر سیکیورٹی سخت کی جائے، دہشت گرد معصوم لوگوں کو نشانہ بنارہے ہیں۔

وزیراعظم نوازشریف کا مزید کہنا تھا کہ دہشت گردوں سے پوری قوت کے ساتھ نمٹا جائے گا، ایسے دہشت گردانہ کارروائیوں کو ریاست پوری قوت کے ساتھ مقابلہ کرے گی، کوئی بھی مسلمان ایسے گھناؤنے اقدام کا سوچ بھی نہیں سکتا۔

وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان کی پارا چنار دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہوئے دھماکے میں جاں بحق افراد کے لواحقین سے اظہار تعزیت بھی کیا ہے۔

امیر جماعت اسلامی سراج الحق اور لیاقت بلوچ نے کہا کہ واقعے میں ملوث ملزمان کو جلد از جلد کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔

ڈاکٹرمحمد طاہر القادری کا کہنا ہے کہ یکے بعد دیگرے دہشت گردی کے واقعات سے حکمرانوں کی مکمل ناکامی ظاہرہوگئی، دہشتگردی کے خاتمے کے دعوؤں کی بازگشت بھی ختم نہیں ہوتی کہ نیا المیہ جنم لے لیتا ہے
دہشت  گردی کی نظریاتی جڑیں کاٹنے کیلئے جتنے پلان بنے ایک ایک کر کے ختم کر دئیے گئے۔

سید مصطفی کمال نے کہا کہ ماہ صیام میں دشمن کی بزدلانہ کارروائیاں تشویشناک ہیں۔ گورنرخیبرپختونخوا انجینئراقبال ظفرجھگڑا نے کہا کہ رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں معصوم لوگوں کو نشانہ بنانے والے انسان کہلانے کے مستحق نہیں ہے، انہوں نے پولیٹکل انتظامیہ سے واقعے کی رپورٹ طلب کرلی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top