گیس بحران ، وزیراعظم کا سوئی ناردرن اور سدرن گیس کےبورڈز آف ڈائریکٹرزکو فوری ہٹانےکافیصلہ
The news is by your side.

Advertisement

گیس بحران ، وزیراعظم کا سوئی ناردرن اور سدرن گیس کےبورڈز آف ڈائریکٹرزکو فوری ہٹانےکافیصلہ

اسلام آباد : گیس بحران پر وزیراعظم عمران خان نے سوئی ناردرن،سدرن گیس کے بورڈز آف ڈائریکٹرزکو فوری ہٹانے کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا ذمہ داروں کو کسی صورت معاف نہیں کیا جائےگا، گیس کامسئلہ بڑامسئلہ ہے، ہرصورت ختم کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے گیس کی قلت کےمعاملے پر سوئی ناردرن،سدرن گیس کےبورڈز آف ڈائریکٹرزکو فوری ہٹانے کا فیصلہ کرلیا فیصلہ گزشتہ روزوزیراعظم کی زیرصدارت ہنگامی اجلاس کے بعد کیا گیا۔

ذمہ داروں کوکسی صورت معاف نہیں کیا جائےگا

وزیراعظم عمران خان

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ذمہ داروں کوکسی صورت معاف نہیں کیا جائےگا ، عوام کوکسی صورت تکلیف نہیں ہونی چاہیے۔ عوام کی ترجمانی کے لیےحکومت میں آئےہیں، گیس کامسئلہ بڑامسئلہ ہے، ہر صورت ختم کریں گے۔

یاد رہے گزشتہ وزیراعظم کی زیر صدارت ملک میں گیس بحران سے متعلق ہنگامی اجلاس ہوا تھا، جس میں وزیراعظم نے گیس کے بحران کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے نااہلی کا مظاہرہ کرنے والوں کے خلاف کارروائی کا حکم دیا تھا اور 72گھنٹے میں رپورٹ طلب کرلی تھی۔

وزیرپیٹرولیم نے ایس این جی پی ایل اور ایس ایس جی سی کو ذمہ دار ٹھہرایا تھا۔

مزید پڑھیں : وزیر اعظم عمران خان نے گیس کے بحران کا نوٹس لے لیا، 3 دن میں رپورٹ طلب

وزیراعظم عمران خان نے گیس بحران کی تحقیقات کیلئے چئیرپرسن اوگرا عظمیٰ عادل کی سربراہی میں چار رکنی کمیٹی بنادی تھی اور کمیٹی کو سوئی ناردرن اور سوئی سدرن کے ایم ڈیز کے خلاف تحقیقات کرنے کی ہدایت کی گئی تھی۔

خیال رہے کراچی میں گزشتہ تین روز سے جاری گیس کا بحران مبینہ طور پر مصنوعی نکلا تھا ، سندھ کی گیس پنجاب کو فراہم کرنے کا انکشاف ہوا ہے، پی پی ایل کے ذرائع نے انکشاف کیا تھا کہ گمبٹ گیس فیلڈ میں کوئی خرابی نہیں ہے بلکہ گیس بحران کی اصل وجہ آر ایل این جی ٹرمینل میں خرابی ہے۔

واضح رہے سوئی سدرن گیس کمپنی نے صوبے بھر میں سی این جی سیکٹرکو گیس کی فراہمی غیر معینہ مدت کیلئے بند کردی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں