The news is by your side.

Advertisement

پولیو وائرس کے پھیلنے کی کیا وجوہات ہیں؟

کراچی : پولیو ایک طاقتور اور خطرناک وائرس ہے، کسی بھی خطرناک مرض کی طرح اسے دوا کے بار بار استعمال کے ذریعے شکست دینے کی ضرورت ہے۔

پولیو کے قطروں کی متعدد خوراکیں مکمل طور پر محفوظ ہیں، اس کے علاوہ یہ آپ کے بچے کو ہر اضافی خوراک کے ساتھ اس خطرناک اور ناقابل علاج مرض کے خلاف تحفظ فراہم کرتی ہیں۔

پولیو وائرس کے پھیلنے کی کیا وجوہات ہیں؟

پولیو اس وقت تک پھیلتا رہے گا جب تک ہر جگہ سے اس کا مکمل خاتمہ نہیں ہو جاتا، یہی وجہ ہے کہ اب یہ انتہائی ضروری ہو چکا ہے کہ بچوں کو ہر جگہ قطرے پلائے جائیں تاکہ جب وائرس ان کے علاقے میں پھیلے تو وہ اس سے محفوظ رہیں۔

ماہرین صحت کے مطابق ایک مرتبہ جب وائرس کسی علاقے میں اپنی جگہ بنا لیتا ہے تو یہ ان بچوں کو باآسانی متاثر کرسکتا ہے جنہوں نے پولیو ویکسین کے قطرے نہیں پیے ہوتے۔

ویکسین پینے کے بعد بھی کچھ بچے پولیو کا شکار کیوں ہو جاتے ہیں؟

پولیو وائرس کے خلاف بچے میں قوت مدافعت پیدا کرنے کی صلاحیت کا انحصار بشمول دوسرے امور، اس بات پر بھی ہوتا ہے کہ اس کے ارد گرد کا ماحول کیسا ہے۔ اچھے حالات یعنی صفائی ستھرائی اور صحت کے بہترین نظام کی موجودگی میں، ایک بچے کو پولیو سے محفوظ رکھنے کے لئے ویکیسن کی کم از کم تین خوراکیں درکار ہوتی ہیں۔

گرم اور مرطوب آب و ہوا والے ممالک یا ایسے ترقی پذیر ممالک جہاں بچوں میں غذائی کمی اور دستوں کی بیماری عام ہو، صفائی ستھرائی کا نظام اچھا نہ ہو اور حفظان صحت کی سہولیات بڑی سطح پر میسر نہ ہوں، وہاں بچوں میں پولیو کے خلاف مضبوط قوت مدافعت کے حصول کے لئے ویکیسن کی بہت سی خوراکوں کی ضرورت ہو سکتی ہے۔

بہت سے بچے جو ویکسین کی کئی خوراکیں لینے کے بعد بھی پولیو کا شکار ہو جاتے ہیں،یہ وہ بچے ہوتے ہیں جنہوں نے حفاظتی ٹیکوں کے شیڈول کے تحت پلائی جانے والی خوراکیں نہیں لی ہوتیںیا پھر کبھی ویکسین کی خوراک لی ہی نہیں ہوتییا پھر ناکافی خوراکیں لی ہوتی ہیں۔

کیا پولیو ویکسین میں کوئی مضر اثرات بھی ہوتے ہیں؟

پولیو ویکسین تمام ویکسینز میں سے محفوظ ترین ہے، اسے بیمار اور نوزائیدہ بچوں کو بھی پلایا جاسکتا ہے۔ یہ ویکسین دنیا بھر میں بچوں کو پولیو سے تحفظ دینے کےلئے استعمال کی جارہی ہے، اور اس کے ذریعے کم از کم 8 ملین بچوں کو مستقل طور پر معذور ہونے سے بچایا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں