The news is by your side.

Advertisement

سعودی تیل تنصیبات پر حملوں کے بعد قیمتوں میں زبردست اضافہ

ریاض: تیل کی سعودی تنصیبات پر حملوں کے بعد خام تیل کی قیمتوں میں زبردست اضافہ ہو گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب میں ڈرونز اور میزائلوں کے ذریعے تیل تنصیبات کو نشانہ بنایا گیا تھا تاہم سعودی عرب نے انھیں نشانے پر پہنچنے سے قبل ہی تباہ کر دیا۔

سعودی عرب نے کہا ہے کہ اُس نے ڈرونز اور میزائلوں کو نشانے پر پہنچنے سے پہلے ہی روک لیا جن کا بہ ظاہر ہدف تیل سے متعلقہ تنصیبات تھیں، تاہم ان حملوں کی وجہ سے خام تیل کی قیمتوں میں بھاری اضافہ ہوا ہے۔

سعودی حکومت کا کہنا ہے کہ ان حملوں کا نشانہ سرکاری زیرِ انتظام کمپنی سعودی آرامکو کی تنصیبات تھیں، مشرقی شہر دمّام کے نزدیک اتوار کی صبح سے رات پڑنے تک ڈرونز اور میزائل آتے رہے۔

سعودی عرب کی تیل تنصیبات پر حملے، مختلف ممالک کی شدید مذمت

حملوں کی مذمت کرتے ہوئے سعودی حکومت کا کہنا تھا کہ حوثیوں نے دنیا کے لیے توانائی کی فراہمی کی سلامتی اور استحکام کو نشانہ بنایا ہے، دوسری طرف ہمسایہ ملک یمن میں حوثی فورسز نے تسلیم کیا کہ اُنھوں نے ایک بڑی کارروائی میں سعودی عرب کے قلب میں 14 ڈرونز اور 8 میزائل داغے ہیں۔

حالیہ حملوں کے بعد تیل کی بین الاقوامی قیمتوں کا بنیادی اشاریہ ڈبلیو ٹی آئی، تقریباً ڈھائی سال کی اپنی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں