برطانیہ کی ننھی شہزادی کا انوکھا اعزاز -
The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ کی ننھی شہزادی کا انوکھا اعزاز

لندن: ایک دن قبل جب برطانیہ کے شاہی خاندان میں ایک اور شہزادے کی آمد کا جشن پورے برطانیہ میں منایا جارہا ہے، اسی دن شاہی خاندان کی 2 سالہ ننھی سی شہزادی نے ایک انوکھی تاریخ رقم کی ہے۔

یہ 2 سالہ ننھی شہزادی شارلٹ برطانیہ کی وہ پہلی شہزادی بن گئی ہے جو نئے شہزادے کی آمد کے باوجود تخت نشینی کے لیے اپنی جگہ برقرار رکھنے میں کامیاب رہی ہے۔

برطانیہ میں تخت نشینی کے اصولوں میں ایک اہم اصول یہ بھی ہے کہ تخت کے لیے پہلی ترجیح شہزادے یا اس کے بیٹے ہوں گے۔

کسی شہزادی کو تخت پر اسی صورت میں براجمان کیا جاسکتا ہے جب تخت نشینی کے لیے کوئی دوسرا مرد امیدوار موجود نہ ہو، وہ دنیا میں نہ ہو یا کسی وجہ سے تخت سے دستبرداری کا اعلان کردے۔

برطانوی شاہی خاندان میں 5 سال قبل تک نافذ اس سکسیشن ایکٹ 1701 کے تحت جیسے ہی کوئی نیا شہزادہ دنیا میں آتا تھا تو وہ اپنی بڑی بہن کو تخت نشینی کے امیدواروں کی فہرست سے بے دخل کر کے خود اس کی جگہ پر قابض ہوجاتا تھا، یعنی چھوٹے بھائی کی موجودگی کی صورت میں بڑی بہن کسی صورت تخت کی حقدار نہیں ہوسکتی اور اس کے چھوٹے بھائی کو ہی تخت پر بٹھایا جائے گا۔

تاہم 5 سال قبل سنہ 2013 میں پرانا ایکٹ منسوخ کر کے سکسیشن ٹو دا کراؤن ایکٹ 2013 نافذ العمل کردیا گیا جس کے مطابق تخت نشینی کے حقداروں کی فہرست اب عمر اور رتبے کے لحاظ سے مرتب ہوگی جس میں صنف کا کوئی عمل دخل نہیں ہوگا۔

مذکورہ ایکٹ کی وجہ سے ننھی شہزادی شارلٹ اپنے دادا، والد اور بھائی کے بعد تخت نشینی کے لیے چوتھے نمبر پر فائز تھیں اور ان کا یہ درجہ نئے شہزادے کی آمد کے باوجود برقرار ہے۔

گویا نیا شہزادہ تخت نشینی کے حقداروں کی فہرست سے اپنی بڑی بہن کو خارج نہیں کرسکتا اور اسے اپنی بہن کی تخت نشینی کے خاتمے کے بعد ہی تخت پر بیٹھنا نصیب ہوگا۔

اس وقت برطانوی شاہی تخت پر ملکہ الزبتھ براجمان ہیں اور ان کی موت یا تخت سے دستبرداری کی صورت میں ان کے صاحبزادے پرنس چارلس کو بادشاہ بنایا جائے گا۔

شہزادہ چارلس کے بعد ان کے صاحبزادے پرنس ولیم، اور ان کے بعد ولیم کے 4 سالہ صاحبزادے جارج ولی عہد کی حیثیت رکھتے ہیں جبکہ ان کے بعد ننھی شہزادی شارلٹ اور اس کے بعد نومولود شہزادے کا نمبر آئے گا جس کا تاحال کوئی نام نہیں رکھا گیا۔

مستقبل میں یہ شہزادے اور شہزادیاں اسی ترتیب سے تخت نشین ہوتے جائیں گے۔

شاہی خاندان کے بارے میں مزید مضامین پڑھیں


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں