The news is by your side.

دوران پرواز پائلٹ بے ہوش، آٹو موڈ پر لگا طیارہ گر کر تباہ

میڈرڈ: اسپین سے جرمنی کیلئے اڑان بھرنے والا نجی طیارہ سمندر میں گر کر تباہ ہوگیا ہے، طیارے میں چار افراد سوار تھے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق نجی کمپنی کے طیارے نے اتوار کے روز دوپہر 12 بجکر 57 منٹ پر جنوبی اسپین کے شہر جیریز سے جرمنی کے شہر کولون کے لیے اڑان بھری تھی تاہم منزل پر پہنچے کے بعد جہاز نے لینڈنگ نہیں کی اور مسلسل پرواز کرتے ہوئے جرمنی کی فضائی حدود سے بھی باہر نکل گیا۔

حکام کا کہنا ہے کہ طیارہ ایندھن ختم ہونے تک مسلسل 4 گھنٹے 50 منٹ تک پرواز کرتا رہا اور ایندھن ختم ہونے پر سمندر میں گر کر تباہ ہوگیا، طیارے کے مالک جرمن بزنس مین پیٹر گریسمین تھے اور حادثہ کے وقت وہ، ان کی اہلیہ، بیٹی اور اس کا بوائے فرینڈ سوار تھے۔

ائیر ٹریفک کنٹرول کے رابطہ کرنے پر ڈنمارک کی فضائیہ نے اڑان کے دوران سیسنا طیارے کا جائزہ لیا، ڈنمارک فضائیہ حکام کا کہنا ہے کہ طیارے کے کاک پٹ میں ممکنہ طور پر کوئی بھی موجود نہیں تھا اور پائلٹ سیٹ پر ایک بیگ کی موجودگی پائی گئی۔

فضائی ماہرین کے مطابق طیارہ آٹو پائلٹ پرواز موڈ پر تھا اور اس وقت تک اڑتا رہا جب تک کہ اس کا ایندھن ختم نہیں ہوگیا۔ ممکنہ طور پر کیبن پریشر کے مسائل کی وجہ سے پائلٹ سمیت طیارے کے تمام مسافر بے ہوش ہوگئے تھے، جس کی وجہ سے یہ حادثہ پیش آیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں