بحرین: عوام کے مقدمات فوجی عدالتوں میں‌ چلانے کی منظوری Bahrain army court
The news is by your side.

Advertisement

بحرین: عوام پر فوجی عدالتوں میں‌ مقدمات چلانے کی منظوری

منامہ: بحرین کی حکومت نے عوام کے مقدمات فوجی عدالتوں میں چلانے کی منظوری دے دی، انسانی حقوق کی تنظیموں نے اس اقدام کی مخالفت کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق بحرین کے ارکان پارلیمنٹ نے آج اتوار کو آئین میں ترمیم کرتے ہوئے شہریوں کے مقدمات فوجی عدالتوں میں چلانے کی منظوری دے دی۔

اطلاعات ہیں کہ دو ہفتے قبل بحرین کی اسمبلی نے بھی معمولی مخالفت کے بعد اس ترمیم کی منظوری دی تھی، یہ منظوری بحرین کے بادشاہ حماد بن عیسیٰ الخلیفہ کی جانب سے مقرر کردہ 40 رکنی مشاورتی کونسل نے دی۔

انسانی حقوق کی تنظیمون نے اقدام کی مخالفت کی ہے اور خبردار کیا ہے کہ یہ اقدام عوام کے حقوق سلب کرنے کے مترادف ہے، اس فیصلے سے ریاست میں غیر اعلانیہ طور پر مارشل لا نافذ ہو جائے گا تاہم حکومتی حلقوں کا موقف ہے کہ ملک میں دہشت گردی کے خلاف جنگ کے لیے یہ قدم اٹھانا ناگزیر تھا۔

واضح رہے کہ بحرین میں سال 2011ء کے پرتشدد مظاہرے کے بعد سے اصلاحات کا سلسلہ جاری ہے ، پہلے کے مقابلے میں اب وہاں کے حالات زیادہ مخدوش ہیں، حکومت کو بغاوت کے خدشات لاحق ہیں جس کے لیے وہ اقدامات اٹھانے میں مصروف ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں