site
stats
اہم ترین

پنجاب حکومت کا 1681 ارب کا بجٹ پیش، تنخواہوں و پنشن میں 10فیصد اضافہ

لاہور: پنجاب حکومت نے نئے مالی سال کے لیے سولہ کھرب اکیاسی ارب روپے کا بجٹ اسمبلی میں پیش کردیا، ترقیاتی منصوبوں کے لیے پانچ سو پچاس ارب اور کسان پیکیج کے لیے پچاس ارب روپے مختص کیے گئے ہیں،سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں دس فیصد اضافے کا اعلان کیا گیا ہے، بجٹ پر اپوزیشن نے احتجاج کرتے ہوئے اسے مسترد کردیا اور اسے شریف خاندان کا بجٹ قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق نئے مالی سال 2016-17ء کے لیے پنجاب اسمبلی کا بجٹ وزیر خزانہ عائشہ غوث پاشا نے  اسپیکر رانا محمداقبال کی زیر صدارت پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں پیش کیا۔ اجلاس میں وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف بھی موجود تھے۔

وزیر خزانہ پنجاب نے بتایا کہ تعلیم،صحت،زراعت،صاف پانی کی فراہمی اولین ترجیحات ہیں،صحت کے شعبے کے لیے بھاری رقم مختص کی گئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ صاف پانی کی فراہمی کے لیے پچھلے سال کی بہ نسبت 88 فیصد زائد بجٹ مختص کیا گیا ہے،امن و عامہ کے لیے پچھلے سال کی بہ نسبت 45 فیصد زائد بجٹ مختص کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب میں تھانہ کلچر کو ہمیشہ ہمیشہ کے لیے ختم کرنے میں کامیاب ہوجائیں گے، پنجاب میں ترقیاتی منصوبوں کے لیے 550 ارب روپے،کسان پیکیج کے لیے 50ارب روپے مختص کیے ہیں، سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں دس فیصد اضافہ کیا جارہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top