The news is by your side.

Advertisement

کورونا سے بچانے والے انجکشن کی براہ راست خریداری پر پابندی

لاہور :  پنجاب حکومت نے اسپتالوں پر کورونا سے بچانے والا انجکشن خریدنے پر پابندی لگادی اور کہا کوئی اسپتال انجکشن خریدنا چاہتا ہے تو سیکریٹری ہیلتھ کیئر کو آگاہ کرے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب میں اسپتالوں کے براہ راست ٹوسلی ذوماب’’ایکٹیمرا‘‘انجکشن خریدنے پرپابندی عائد کردی گئی، انجکشن خریدنے سے متعلق سیکریٹری ہیلتھ کئیر نے تمام اسپتالوں کے سربراہان کو مراسلہ جاری کردیا ہے۔

مراسلے میں کہا گیا اسپتالوں کےسربراہان نے منظوری کے بغیر ٹوسلی ذوماب انجکشن خریدنا شروع کیا، اسپتال کمپنی سے انجکشن کی خریداری کے لیے براہ راست رابطہ کرنے لگے، کوئی اسپتال انجکشن خریدنا چاہتا ہے توسیکریٹری ہیلتھ کیئر کو آگاہ کرے۔

محکمہ صحت پنجاب نے کہا کہ انجکشن کورونا مریضوں کو تجویز ،لگانے کیلئے ایکسپرٹ کی ضرورت ہوتی ہے، متعلقہ انجکشن کےاستعمال کا فیصلہ کورونا ایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ کرے گا۔

خیال رہے کورونا وائرس  کے مریضوں کے لیے استعمال ہونے والا ایکٹیمرا انجیکشن اچانک نایاب ہو گیا، 29 ہزار روپے کا یہ انجیکشن اب 1 لاکھ روپے سے زائد میں فروخت کیا جا رہا ہے۔

ہول سیل کیمسٹ کونسل آف پاکستان کے صدر عاطف بلو نے وزیر اعظم اور چیف جٹس سے مطالبہ کیا ہے کہ انجیکشن کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے۔

میڈیسن سیلرز کے مطابق پورے پاکستان میں اس انجیکشن کی ڈیماینڈ ہے لیکن اسٹاک شارٹ ہو چکا ہے، ڈریپ اور وفاقی حکومت نے صورت حال کو فوری کنٹرول نہ کیا تو مریضوں کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں