The news is by your side.

بلقیس بانو کو مشہور بھارتی پنجابی گلوکار کی جانب سے اہم پیغام

گجرات: بھارت میں زیادتی اور ناانصافی کی شکار مسلمان خاتون بلقیس بانو کو مشہور بھارتی پنجابی گلوکار کی جانب سے اہم پیغام دیا گیا ہے، رَبی شیر گِل نے ان سے کہا ہے کہ وہ پنجاب آ جائیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق انڈین پنجابی سنگر ربی شیر گِل نے 2002 کے گجرات فسادات میں زیادتی کا شکار ہونے والی مسلمان خاتون بلقیس بانو کو پیغام دیا ہے کہ وہ پنجاب آ جائیں، ان کی حفاظت سردار کریں گے۔

گلوکار ربی شیر گِل نے کہا کہ ’’میں بلقیس سے کہنا چاہتا ہوں کہ وہ پنجاب آ جائیں، ہم اپنے خون کے آخری قطرے تک ان کی حفاظت کریں گے، سردار آپ کی حفاظت کریں گے۔‘‘

انھوں نے ہکا یہ صرف ہماری کمیونٹی کے بارے میں نہیں ہے، میں انھیں ذاتی طور پر گلے لگانا چاہتا ہوں اور یہ کہنا چاہتا ہوں کہ ان کا درد ہمارا درد ہے اور وہ اکیلی نہیں۔‘‘

ربی شیر گِل نے مزید کہا: ’’میرا پیغام تقریباً سب کے لیے یہی ہے، کہ انصاف کی حفاظت کرنا سیکھیں، کیوں کہ جب ہم یہ نہیں کرتے، ہم معاشرے کو کھوکھلا کرتے ہیں، ہمارے پاس کوئی ہیرو نہیں ہیں، ہماری نئی نسل یہاں سے جانا چاہتی ہے۔‘‘

یاد رہے کہ ربی شیر گِل نے 2008 میں بلقیس بانو پر ہونے والے ظلم کے خلاف انھیں خراج تحسین پیش کرنے کے لیے ’بلقیس۔ جنہیں ناز ہے‘ کے نام سے ایک گانا بھی بنایا تھا۔

بلقیس بانو کیس: مجرموں کی جلد رہائی پر بھارت میں ہزاروں آوازیں اٹھ گئیں

یاد رہے کہ 2002 میں گجرات فسادات کے دوران ایک گاؤں میں 11 افراد نے بلقیس بانو نامی مسلمان خاتون کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا اور ان کی تین سالہ بیٹی کو زمین پر پٹخ کر مارا تھا، جس سے بچی موقع پر ہی انتقال کر گئی تھی۔ اس انسانیت سوز واقعے کے بعد مقامی ڈاکٹروں اور پولیس اہلکاروں نے بھی مجرموں کو بچانے کے لیے کیس میں رد و بدل بھی کیا۔

بلقیس بانو کے ساتھ زیادتی اور بچی کے قتل میں ملوث ان مجرموں کو 2008 میں عمر قید سنائی گئی تھی تاہم 16 اگست 2022 کو ان مجرموں کو گجرات کی حکومت نے معافی کی پالیسی کے تحت رہا کر دیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں