The news is by your side.

Advertisement

یو اے ای کے حکمران نے خدمت کی اعلیٰ مثال قائم کردی

دبئی: متحدہ عرب کی ریاست راس الخیمہ کے حکمران نے خدمت کی اعلٰی مثال قائم کرتے ہوئے لاک ڈاؤن کے دوران ماں سے دور ہونے والے بچے کو ان سے ملوادیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق راس الخیمہ کے حکمران شیخ سعود بن سقر القاسمی کو 7 سالہ برطانوی بچے خط لکھا اور کہا کہ ’کرونا لاک ڈاؤن کی وجہ سے پروازیں بند ہیں جس کی وجہ سے ان کی والدہ برطانیہ میں پھنس گئی ہیں اور 52 روز سے ان کے بغیر ہی رہنے پر مجبور ہیں۔

جیسیکا فٹزجان 52 روز قبل اپنے والد کی آخری رسومات میں شرکت کے لیے برطانیہ گئی تھیں لیکن کرونا وائرس پھیلنے کے سبب سفری پابندیوں کی وجہ سے واپس نہ آسکیں۔

رپورٹ کے مطابق جیسیکا کا 7 سالہ بیٹا آرچی اور شوہر رچرڈ راس الخیمہ میں مقیم ہیں اور اس صورتحال کے پیش نظر ان کے بیٹے آرچی نے شیخ سعود کو خط لکھا اور جس میں ان سے مدد طلب کرتے ہوئے والدہ کو واپس یو اے ای لانے کی اپیل کی گئی۔

آرچی نے گزشتہ سال اپنے ہم جماعت سے شیخ سعود سے ملاقات بھی یاد کروائی اور کہا کہ وہ انہیں ایک انتہائی مہربان، مددگار کے طور پر یاد کرتے ہیں۔

شیخ سعود نے آرچی کو جواب دیتے ہوئے کہا کہ ’آپ کے خط کا شکریہ، مجھے اس کو پڑھنا بہت اچھا لگا، مجھے یاد ہے کہ آپ سے ملنا اور آپ کے ہم جماعتوں کے ساتھ اچھا دن گزرا تھا، میں سمجھ سکتا ہوں کہ آپ کو والدہ کی بہت یاد آتی ہوگی اور مجھے معلوم ہے کہ والدہ کے گھر آنے سے آپ کو خوشی ملے گی۔

NAT RAK PIC-1589382499236

رپورٹ کے مطابق والدہ کے یو اے ای واپس پہنچنے پر آرچی نے خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میں والدہ کو واپس پاکر بہت خوش ہوں، مجھے یقین نہیں آرہا، شیخ سعود آپ کا بہت شکریہ۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں