The news is by your side.

Advertisement

سابق چیف جج گلگت بلتستان رانا شمیم نے فرد جرم چیلنج کر دی

اسلام آباد : سابق چیف جج گلگت بلتستان رانا شمیم نے فرد جرم چیلنج کر دی ، اپیل میں کہا کہ جنہوں نے بیان حلفی چھاپا انہیں چھوڑ کرصرف مجھ پرفرد جرم غیرقانونی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سابق چیف جج گلگت بلتستان رانا شمیم نے فرد جرم کے خلاف انٹراکورٹ اپیل دائر کردی۔

اپیل یں کہا گیا کہ جنہوں نے بیان حلفی چھاپا انہیں چھوڑ کرصرف مجھ پرفرد جرم غیرقانونی ہے، فرد جرم عائد کرنے کا حکمنامہ کالعدم قرار دیکر کیس ختم کیا جائے۔

رانا شمیم کا کہنا تھا کہ کچھ ریکارڈ پر نہیں کہ میں نے کسی کو بیان حلفی چھاپنے کو دیا۔

اپیل میں رانا شمیم نے انصار عباسی ، میر شکیل الرحمان اور عامر غوری کو بھی فریق بنایا گیا اور کہا انصار عباسی کو ٹرائل سے نکال کر کیسے پتہ چلے گا انھیں بیان حلفی کیسے ملا۔

دائر اپیل میں کہا گیا کہ کیس کے مرکزی ملزم کو پرائیوٹ افراد کی یقین دہانی پر ڈسچارج کردیا گیا ، قانون میں پرائیوٹ افراد کی یقین دہانی پر ایسا کرنے کا تصور موجود نہیں۔

جنہوں نے تسلیم کیا انھوں نے اشاعت کی ، ان پر کیس ختم کردیا گیا ، میں برملا کہہ رہا ہوں کسی کو بیان حلفی چھپانے کو نہیں دیا، میری واضح تردید کے باوجود فرد جرم عائد کردی گئی۔

رانا شمیم کی جانب سےفرد جرم کےخلاف انٹراکورٹ اپیل پرسماعت آج ہو گی ، اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس طارق محمود اور جسٹس بابرستار سماعت کریں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں