The news is by your side.

Advertisement

چونیاں میں ایک اور بچے کی باقیات برآمد

قصور: چونیاں کے مضافاتی علاقے سے ایک اور بچے کی باقیات برآمد ہوئی ہیں، قتل کیے گئے بچوں کی تعداد 5 ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق قصور کے ضلع پتوکی کے علاقے چونیاں سے ایک اور بچے کی باقیات ملی ہیں، قتل کیے گئے بچوں کی تعداد پانچ ہوگئی ہے جبکہ گرفتار ملزم کا ڈی این اے مقتول بچوں سے میچ نہیں ہوا ہے۔

پولیس نے لاش کی باقیات کو اپنی تحویل میں لے کر تفتیش کا آغاز کردیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ بچے کی باقیات جس جگہ سے ملی ہے وہ اس مقام سے قریب ہی ہے جہاں سے پہلے زیادتی کے بعد قتل ہونے والے 4 بچوں کی لاشیں اور باقیات ملی تھیں۔

مزید پڑھیں: سانحہ چونیاں، پولیس کی غفلت کے مزید انکشافات، سابق ڈی پی او صوبہ بدر

پولیس تاحال اصل ملزم کو گرفتار نہیں کرسکی ہے جس کے سبب پولیس کے تفتیشی عمل پر سوالات اٹھ گئے ہیں۔

یاد رہے کہ قصور کے ضلع پتوکی کے علاقے چونیاں میں‌ ایک ہول ناک واقعہ پیش آیا تھا، جس سے پورے علاقے میں کھلبلی مچ گئی تھی، ویران علاقے سے لاپتا بچوں‌ کی مسخ شدہ لاشیں برآمد ہوئیں، ایک لاش مکمل تھی، جب کہ باقی دو کے اعضا اور ہڈیاں پائی گئی تھیں۔

وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پر غفلت برتنے والے ڈی ایس پی اور ایس ایچ او کو معطل کر کے ڈی پی او قصور کو بھی عہدے سے ہٹا دیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے چونیاں واقعے کے بعد قصور میں چائلڈ پروٹیکشن بیورو کے قیام کا اعلان کیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں