The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب کی جانب سے پاکستان کو تیل فراہمی جولائی سے شروع ہوگی

اسلام آباد: پاکستان کو سعودی عرب کی جانب سے تیل فراہمی جولائی سے شروع ہوگی، تیل کی مجموعی لاگت 9.9 ارب ڈالر ہے۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب کے سفارت خانے نے اپنے ایک اعلامیہ میں کہا ہے کہ پاکستان مؤخر ادائیگی پرماہانہ 275 ملین ڈالرکا تیل حاصل کرے گا.

سفارت خانے کے اعلامیہ کے مطابق جولائی میں پاکستان کو تیل کی فراہمی شروع ہوگی، تیل کی فراہمی کا سلسلہ 3 سال تک جاری رہے گا. 

خیال رہے کہ سعودی عرب نے گزشتہ اکتوبرمیں پاکستان کے لیے معاشی پیکج کا اعلان کیا تھا، پاکستان کو دیا جانے والا معاشی پیکج 3 ارب ڈالر کا  تھا۔

سعودی سفارت خانہ کے مطابق پیکج سے پاکستان کو ادائیگیوں کے توازن میں مدد ملے گی، پاکستان اور سعودی عرب میں 20 ارب ڈالر مالیت کے معاہدےہوئے تھے.

وزیراعظم عمران خان اورسعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی ملاقات

سفارت خانہ کے مطابق امداد سعودی قیادت کی طرف سے پاکستانی معیشت کی سپورٹ کے لیے ہے، یہ مدد پاکستان اور سعودی عرب میں گہرےتعلقات کی عکاس ہے.

تجزیہ کاروں کے مطابق اس عمل سے پاکستانی معیشت میں بہتر آئے اور روپے کی قدر مستحکم ہوگی۔

خیال رہے کہ یکم جون کو شہر مکہ میں وزیر اعظم عمران خان اور سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی ملاقات ہوئی تھی۔

وزیراعظم پاکستان نے مؤخر ادائیگیوں پر پاکستان کو تیل کی فراہمی پر سعودی حکومت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا تھا کہ سعودی عرب کے برادرانہ اقدام سے پاکستانی معیشت بہترہوئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں