The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں موجود وکیلوں کے لیے خوشخبری

ریاض: سعودی عرب میں غیر سعودی شہریوں کو سعودی بار ایسوسی ایشن کا حصہ بنانے کے لیے تنظیمی ڈھانچے میں درکار ترامیم کے لیے غور کیا جارہا ہے۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی بار ایسوسی ایشن کے معاہدے سے یہ شق نکالنے کی منظوری دے دی گئی ہے جس کے تحت صرف سعودی شہری ہی ایسوسی ایشن کی رکنیت کا حصہ ہوں گے۔

تاہم یہ شرط رکھی گئی ہے کہ مملکت میں وکالت کی پریکٹس صرف سعودی شہری ہی کرسکیں گے۔

دوسری جانب شوریٰ کونسل نے کوڈ آف لا پریکٹس کے مذکورہ حصے میں تبدیلی کی منظوری دے دی ہے جس کے بعد اب اس کا متن ہے، ریاست میں موجود ہر وہ شخص جس کے پاس وکالت کا لائسنس ہو اسے سعودی بار ایسوسی ایشن کا حصہ بننا لازمی ہوگا۔

وزارت انصاف کے مطابق اس وقت مملکت میں 18 ہزار وکلا وکالت کی پریکٹس کر رہے ہیں جن میں خواتین کی بھی بڑی تعداد شامل ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں