The news is by your side.

Advertisement

پاکستان اور بھارت مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے مذاکرات کریں، سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ

نیویارک : اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گیٹرس نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیرمیں کرفیو کو60روز گزر گئے ہیں، پاکستان اوربھارت مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے بامقصد مذاکرات کریں۔

تفصیلات کے مطابق اقوام متحدہ کو مقبوضہ کشمیر میں عوام کے ساتھ کیے گئے بھارتی مظالم کا خیال آگیا، مقبوضہ کشمیر کی موجودہ صورتحال پر سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گیٹرس نے کشمیرکی صورتحال پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اپنے بیان میں کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیرمیں80لاکھ لوگ دو ماہ سے قید میں ہیں۔

مقبوضہ کشمیرمیں کرفیو کو60روزگزر گئے ہیں، کشمیرمیں 80لاکھ لوگ بنیادی ضرورتوں سےمحروم ہیں، انہوں نے مطالبہ کیا کہ مسئلہ کشمیر کےحل کیلئے پاکستان اور بھارت بامقصد مذاکرات کریں، ان کا مزید کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیرکی صورتحال پراقوام متحدہ کاموقف تبدیل نہیں ہوا۔

یاد رہے کہ وزیر اعظم عمران خان کے دورہ امریکہ اور اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کے بعد دنیا کی توجہ اس مسئلہ کی جانب مبذول ہوگئی ہے اور مسئلہ کشمیر عالمی سطح پر اجاگر ہوا ہے جس کے باعث دینا بھر کی انسانی حقوق کی تنظیمیں بھی مقبوضہ کشمیر کے حالات پر اپنی تشویش کا اظہار کررہی ہیں۔

مزید پڑھیں: مقبوضہ کشمیر میں 60ویں روز بھی کرفیو، نظام زندگی مفلوج 

واضح رہے کہ آرٹیکل 370 اے ختم کرنے کے بعد مقبوضہ کشمیر میں 60ویں روز بھی کرفیو جاری ہے، موبائل فون، انٹرنیٹ سروس بند اور ٹی وی نشریات معطل ہیں۔ قابض انتظامیہ نے ٹیلی فون سروس بند کررکھی ہے جبکہ ذرائع ابلاغ پرسخت پابندیاں عائد ہیں۔

کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق مواصلاتی نظام کی معطلی، مسلسل کرفیو اور سخت پابندیوں کے باعث لوگوں کو بچوں کے لیے دودھ، زندگی بچانے والی ادویات اور دیگر اشیائے ضروریہ کی شدید قلت کا سامنا ہے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق وادی میں کرفیو کے باعث 3 ہزار 9 سو کروڑ کا نقصان ہو چکا ہے، وادی میں کھانا میسر ہے اور نہ ہی دوائیں۔ سرینگر اسپتال انتظامیہ کے مطابق کرفیو کے باعث روزانہ 6 مریض لقمہ اجل بن جاتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں