The news is by your side.

Advertisement

بھارت یکطرفہ اقدامات سے امن کو خطرات سے دوچار کرنا چاہتا ہے، شاہ محمود قریشی

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت یکطرفہ اقدامات سے امن کو خطرات سے دوچار کرنا چاہتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھارتی وزیر دفاع کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کے مکینوں کا بلاجواز محاصرہ انتہائی قابل مذمت ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ بھارتی وزیر دفاع کا بیان بھارت کی بدترین صورت حال کی عکاسی کرتا ہے، مقبوضہ کشمیر میں محاصرے کی مزید طوالت بہت بڑا انسانی المیہ ہوگا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ اقوام متحدہ سیکیورٹی کونسل نے غیرمستحکم صورت حال کا نوٹس لیا ہے، عالمی قوانین، یو این چارٹر کے مطابق اپنے موقف پر قائم ہیں۔

مزید پڑھیں: فاشسٹ اور جنگی جنون میں مبتلا ریاستیں کامیاب نہیں ہوسکتیں: وزیر خارجہ

انہوں نے کہا کہ پاکستان مذاکرات چاہتا تھا لیکن بھارت نے خود مذاکرات کو ٹھکرایا، مقبوضہ کشمیر میں زمینی حقائق اس وقت سامنے آئیں گے جب بھارت کرفیو ہٹائے گا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ سنہ 1965 کے بعد پہلی بار سلامتی کونسل نے کشمیر معاملہ متنازع ہونے کی تصدیق کی ہے، تاریخ بتاتی ہے فاشسٹ اور جنگی جنون میں مبتلا ریاستیں کامیاب نہیں ہوسکتیں۔

خیال رہے کہ بھارتی وزیر دفاع راج ناتھ نے ایٹمی حملے میں پہل کرنے کا عندیہ دینے کے بعد ایک اور بیان میں کہا تھا کہ پاکستان سے مذاکرات صرف آزاد کشمیر پر ہوسکتے ہیں۔

یاد رہے کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر پر فوجی طاقت کے ذریعے اپنا تسلط قائم کیا ہوا تھا اور رواں ماہ پانچ اگست کو وہاں کی خصوصی حیثیت ختم کرتے ہوئے وادی کو بھارت کا ہی حصہ بنا ڈالا جس پر عالمی دنیا نے بھی شدید احتجاج کیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں