The news is by your side.

Advertisement

مودی سرکار کو بڑا دھچکا، نوجوت سنگھ کے بعد اہلیہ بھی بی جے پی چھوڑ گئیں

چندی گڑھ: مودی سرکار کو پنجاب کی ریاست میں ایک اور دھچکا، بھارتی جنتا پارٹی کے اہم رہنماء و سابق بھارتی کرکٹر نوجوت سنگھ سدھو کے بعد ان کی اہلیہ نوجوت کور نے بھی بھارتی جنتا پارٹی کو خیرآباد کہہ دیا۔

چندی گڑھ میں پریس کانفرنس کے دوران مسز نوجوت کور نے بی جے پی سے علیحدگی کا اعلان کیا۔ اس موقع پر انہوں نے اپنی سابق جماعت اور بھارتی وزیر اعظم کے حوالے سے انکشاف کیا کہ ’’مودی کے ساتھ کوئی ایماندار شخص نہیں چل سکتا‘‘۔

انہوں نے مزید کہا  کہ ’’بی جے پی کے ساتھ چلنے کے لیے بدعنوان ہونا ضروری ہے، مودی کی جماعت میں صرف کرپٹ، بدعنوان اور جرائم کرنے والے افراد کی جگہ ہے تاہم ایماندار شخص اس کے ساتھ نہیں چل سکتا تاہم میں عوام کے ساتھ زیادتی ہوتی نہیں دیکھ سکتی اس لیے مودی اور بی جے پی سے علیحدگی اختیار کررہی ہوں‘‘۔

قبل ازیں رواں سال جولائی کی 25 تاریخ کو سابق بھارتی کرکٹر نوجوت سنگھ سدھو نے پارٹی پالیسیوں کے سبب بی جے پی چھوڑنے کا اعلان کیا تھا، بھارتی تجزیہ نگاروں کے مطابق دونوں جلد ہی کانگریس یا عام آدمی پارٹی میں شامل ہوجائیں گے۔

یاد رہے مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم، لائن آف کنٹرول پر کشیدگی اور خصوصاً سرجیکل اسٹرائیک کا دعویٰ کرنے کے باوجود قوم کے سامنے ثبوت پیش نہ کرنے کے باعث بھارتی وزیراعظم اور اُن کی جماعت کو اپنے ہی ملک کی سیاسی جماعتوں کی جانب سے شدید مخالفت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں