The news is by your side.

Advertisement

سندھ اسمبلی: پابندی والے پی ٹی آئی اراکین اسمبلی میں داخل

کراچی: پی ٹی آئی ارکان اسمبلی نے اسپیکر سندھ اسمبلی کی جانب سے ارکان پر عائد پابندی کو روندتے ہوئے زبردستی اسمبلی ہال میں داخلے کی کوشش کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسپیکر سندھ اسمبلی نے ایوان میں چارپائی لانے پر پی ٹی آئی کے آٹھ ارکان پر سندھ اسمبلی میں داخلے پرپابندی لگائی تھی تاہم آج اسپیکر کی جانب سے پابندی والے پی ٹی آئی اراکین اسمبلی نے ایوان میں داخلے کی کوشش کی، ارکان نے سندھ اسمبلی کے باہر گیٹ پرچڑھ کر سندھ حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔

اس دوران ارکان نے زبردستی سندھ اسمبلی کا مین گیٹ کھلوانے کی کوشش کی جس پر سندھ اسمبلی کے گیٹ پر سیکیورٹی اہلکاروں اور پی ٹی آئی اراکین میں دھکم پیل بھی ہوئی، حلیم عادل شیخ، خرم شیرزمان سارا عمل میں شریک رہے، بعد ازاں اپوزیشن اراکین سندھ اسمبلی کا دروازے کود کر اندر داخل ہوگئے۔

اراکین میں بلال غفار، سعیداحمد، رابستان خان، ارسلان تاج، محمد علی عزیز، عدیل احمد، شاہنوازجدون اور راجہ اظہر شامل تھے، پی ٹی آئی ارکان نے پابندی کا شکار اراکین کو پھولوں کا ہار پہنا کر اسمبلی ہال میں داخل کرایا، اس موقع پر خواتین اراکین بھی موجود تھے۔

یہ بھی پڑھیں: سندھ اسمبلی اجلاس میں چارپائی کیسے پہنچی؟

اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی نے گذشتہ روز سندھ اسمبلی میں “چارپائی” لانے والے ارکان اسمبلی کے ایوان میں داخلے پر پابندی لگائی تھی، ارکان میں پی ٹی آئی کے پارلیمانی لیڈربلال احمد سمیت سعید احمد، رابستان ، ارسلان تاج، محمد علی عزیز، عدیل احمد، شاہ نواز جدون، راجہ اظہرخان شامل تھے۔

بعد ازاں اسپیکر نے سیکریٹری سندھ اسمبلی کو واقعے کی تحقیقات کر کے انکوائری رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت کر دی ہے، سندھ اسمبلی کی سیکیورٹی بھی بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

سیکریٹری سندھ اسمبلی عمر فاروق نے بتایا کہ وہ اجلاس کے دوران چارپائی لائے جانے کی انکوائری کر رہے ہیں، اسمبلی اسٹاف نے چارپائی اندر لے جانے سے روکنے کی بھرپور کوشش کی تھی، لیکن پی ٹی آئی اراکین زبردستی چارپائی اندر لے آئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں