The news is by your side.

Advertisement

کھلونوں کے ذریعے بچوں کی جاسوسی کا خطرہ

لندن: ٹیکنالوجی پر نظر رکھنے والے ماہرین نے انکشاف کیا ہے کہ بچوں کے اسمارٹ کھلونوں کے ذریعے اُن کی جاسوسی کی جاسکتی ہے۔

غیرملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق بچوں کے اسمارٹ کھلونوں میں سیکیورٹی کا فقدان دیکھنے میں آیا اور ماہرین نے انکشاف کیا کہ ہیکرز ان کھلونوں کے ذریعے بچوں کی جاسوسی بھی کرسکتے ہیں۔

حالیہ دعوے کے بعد برطانوی شہری حکومت پر زور دے رہے ہیں کہ وہ کھلونے بنانے والی کمپنیوں کو پابند کریں کہ وہ اسمارٹ کھلونوں کو فروخت سے قبل سیکیورٹی کے معیار کو محفوظ بنائیں۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ برطانیہ سمیت مختلف ممالک میں کرسمس کی مناسبت سے متعدد کمپنیوں نے اسمارٹ کھلونے فروخت کے لیے پیش کردیے البتہ اُن کی ہیکنگ کا خدشہ بھی ظاہر کیا جارہاہے۔

غیرملکی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق کھلونوں میں بالخصوص واکی ٹاکی ایسی چیز ہے جس سے بچوں کی گفتگو کو باآسانی سنا جاسکتا ہے۔ ٹیکنالوجی کے ماہرین کا کہنا ہے کہ بچے جیسے ہی کھلونے کا سوئچ آن کریں گے تو اُن کا سسٹم تیس سیکنڈ سے بھی کم وقت میں ہیکرز کی ڈیوائس سے جڑ سکتا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گانے ریکارڈ کرنے اور بلیو ٹوتھ سے کنکٹ ہونے والے کھلونوں میں بھی سیکیورٹی کے نقائص سامنے آئے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں