The news is by your side.

Advertisement

مسلمان لڑکے سے محبت کرنے کا جرم، راکیش روشن کا بیٹی پر تشدد

ممبئی: مسلمان لڑکے سے شادی کا ارادہ کرنے پر بھارتی اداکار اور ہدایت کار راکیش روشن نے اپنی بیٹی کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق مسلمان لڑکے سے شادی کا ارادہ کرنے پر بھارتی ہدایت کار راکیش روشن اور ریتھک روشن نے سنینا روشن کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا، راکیش اور ریتھک روشن نے سنینا کو جیل بھجوانے کی بھی کوشش کی۔

سنینا نے انکشاف کیا کہ مسلمان صحافی روحیل امین سے محبت کرنے کی وجہ سے والد نے تشدد کیا اور کہا کہ مسلمان دہشت گرد ہیں۔

سنینا کا بھارتی میڈیا کو دئیے جانے والے انٹرویو میں کہنا تھا کہ روحیل امین دہشت گرد ہوتے تو بھارت میں صحافی کیسے ہوسکتے تھے۔

سنینا کا کہنا تھا کہ ان کی روحیل امین سے گزشتہ سال سوشل میڈیا پر دوستی ہوئی تھی اور انہوں نے ڈر کی وجہ سے روحیل کا فون نمبر بھی چھپا رکھا تھا، میں نہیں چاہتی تھی کہ والد اور بھائی کو اس کا پتا چلے۔

واضح رہے کہ حال ہی میں ریتھک روشن کی بہن سنینا روشن نے اپنے ہی بھائی کے خلاف ٹویٹ کرتے ہوئے پوری بالی ووڈ انڈسٹری کو دنگ کردیا تھا۔

سنینا نے ٹویٹ میں لکھا تھا کہ میری ساری حمایت کنگنا رناوت کے کے ساتھ ہے، جس کے بعد یہ واضح ہوگیا کہ سنینا نے اپنے بھائی پر کنگنا کو ترجیح دی ہے۔

دوسری جانب کنگنا رناوت کی بہن رنگولی کا کہنا تھا کہ سنینا نے انہیں اور کنگنا کو فون کرکے ریتھک روشن اور کنگنا کے معاملے پر پہلے آواز نہ اٹھانے کے لیے معافی مانگی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں