جرمنی میں افغان شہری کا چاقو سے حملہ، تین افراد زخمی German town
The news is by your side.

Advertisement

جرمنی میں افغان شہری کا چاقو سے حملہ، تین افراد زخمی

برلن : جرمن شہر راوینز برگ میں غیر قانونی افغان مہاجر نے تیز دھار چاقو سے حملہ کرکے دو شامی مہاجر سمیت تین شہریوں کو زخمی کردیا ایک کی حالت تشویش ناک ہے۔

تفصیلات کے مطابق یورپی ملک جرمنی کے مغربی حصّے کے شہر راوینزبرگ میں غیر قانونی تارک وطن نے تیز دھار خنجر کے ذریعے حملہ کرکے تین افراد کو شدید زخمی کردیا جنہیں طبی امداد کے لیے فوری طور پر قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا۔

جرمن خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ افغان شہری نے نامعلوم وجوہات کی بناء پر چاقو سے دو شامی اور ایک 52 سالہ جرمن شہری کو گذشتہ روز زخمی کیا تھا، زخمی افراد میں ایک کی حالت تشویش ناک بتائی جارہی ہے۔

مقامی میڈیا کے مطابق حملہ آور کو جرمن پولیس نے شہر کے میئر ڈانیئل راپ کی مدد سے موقع واردات سے ہی گرفتار کرلیا گیا تھا۔

مقامی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ جب حملہ ہوا تو شہر کے میئر موقع واردات پر موجود تھے جنہوں نے افغان شہری کو فرار ہونے روکا اور اپنے گفتگو کے ذریعے اسے ہتھیار ڈالنے پر قائل کیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ حملے میں زخمی ہونے والے شامی تارکین وطن کی عمریں بھی 19 سے 20 برس ہیں اور حملہ آور کی عمر بھی 19 برس ہے۔

جرمن پولیس کا کہنا ہے کہ گذشتہ روز پیش آنے والی چاقو زنی کی واردات کو دہشت گردی کے زمرے میں شمار نہیں کیا جاسکتا۔

پولیس کا کہنا تھا کہ افغان مہاجر نے شہر کے بس اسٹاپ پر دونوں شامی نوجوانوں کو زخمی کیا تھا جبکہ جرمن 52 سالہ جرمن شہری پر چاقو کے وار بس اسٹاپ سے کچھ فاصلے پر ہوئے تھے۔

یاد رہے کہ رواں برس جولائی میں مسافروں سے بھری بس جرمنی کے شہر لیوبیک کے ایک معروف ساحل کی طرف رواں دواں تھی کہ بس میں بیٹھے ایک شخص نے چاقو نکال کر لوگوں پر حملہ کرنا شروع کردیا جس کے نتیجے میں 9 افراد زخمی ہوئے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں