The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں پانی کا بل زیادہ آنے کا معاملہ، کمپنی نے وضاحت کردی

ریاض: سعودی نیشنل واٹر کمپنی نے پانی کا بل زیادہ آنے سے متعلق وضاحت کی ہے کہ بعض صارفین نے معمول سے زیادہ پانی خرچ کیا جس کی بنیاد پر بل بھی اضافی بھیجے گئے۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق کمپنی کا کہنا تھا کہ جن صارفین کا اضافی بل آیا ان کی رہائش میں پانی کے نیٹ ورک سے پانی رس رہا ہے، جس کا تناسب 82 فیصد تک ہے، رساؤ کے نمایاں ترین وجوہات میں واٹر ٹینک سسٹم یا پھر پانی کے لیول کو کنٹرول کرنے والے ربڑ کے نظام کی خرابی ہے۔

واٹر کمپنی نے بتایا کہ پانی زیادہ خرچ ہونے کا دوسرا سبب مکانات کی تقسیم اور عمارت کے یونٹس میں پانی کے نظام کی خرابی ہے، اس سے 16 فیصد پانی زیادہ خرچ ہوتا ہے جبکہ تیسری بڑی وجہ پرانے واٹر میٹرز کی ریڈنگ ہے۔

کورونا وائرس : سعودی حکومت کا عوام کی سہولت کیلئے بڑا اقدام

کمپنی کا یہ بھی کہنا تھا کہ رہائشی عمارتوں کے لیے کفایت شعاری سکیم مکمل کر لی گئی ہے، اس کے تحت رہائش میں پانی کے ضائع ہونے کا پتہ لگایا گیا کہ کہاں سے اور کیسے ہو رہا ہے۔

آبی وسائل کی فراہمی سے متعلق ادارے نے مزید کہا کہ بلنگ سے متعلق نئے امور پر بھی کام کررہے ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں