The news is by your side.

Advertisement

کروناوائرس: ’’امریکا کے خلاف سازش شروع ہوگئی‘‘

واشنگٹن: کروناوائرس کے پیش نظر امریکی حکام کی جانب سے فراہم کیے جانے والے عوامی تعاون کو متاثر کرنے کے لیے سائبر حملے شروع ہوگئے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق امریکی محکمہ صحت اور عوامی سروسز فراہم کرنے والے شعبوں کے سسٹم پر متعدد بار سائبر حملے ہوئے۔

امریکی میڈیا کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سسٹم ہیک کرنے کا مقصد امریکی انتظامیہ کی کروناوائرس سے متعلق خدمات کو ٹھیس پہنچانا ہے، سازش کے تحت سائبر حملہ کرکے ہیکرز امریکی سہولیات کی بچھائی ہوئی جال کو متاثر کرنا چاہتے ہیں۔

امریکی سسٹم پر رات گئے درجنوں سائبر حملے ہوئے۔

خیال رہے کہ مہلک ترین کروناوائرس نے امریکا میں بھی اپنے پنجے گاڑ لیے ہیں۔ مہلک وائرس سے امریکا بھر میں اب تک ہلاک افراد کی تعداد 66 تک پہنچ چکی ہے جبکہ مزید ہلاکتوں کے بھی خدشات ہیں۔

کرونا وائرس، امریکا میں ایمرجنسی نافذ

دوسری جانب امریکا اور چین کے درمیان کروناوائرس سے متعلق لفظی گولہ باری بھی جاری ہے۔

یاد رہے کہ چین نے الزام عائد کیا تھا کہ ووہان شہر میں کرونا وائرس امریکی فوجیوں کی وجہ سے پھیلا ہے۔ بعد ازاں وائٹ ہاؤس انتظامیہ نے اس دعوے کو بے بنیاد قرار دیا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں