The news is by your side.

Advertisement

ماہ رمضان میں ٹماٹو کیچپ کا استعمال کتنا ضروری ہے ؟

اکثر لوگ ہر ڈش کے ساتھ کیچپ لینا پسند کرتے ہیں، اب وہ فرنچ فرائز ہوں، برگر ہو، یا پھر کچھ اور انھیں ہر ڈش کا مزہ بڑھانے کے لیے کیچپ کی ضرورت پڑتی ہے، بہت کم لوگ ایسے نظر آتے ہیں جنہیں کیچپ پسند نہ ہو۔

بہت سے لوگوں نے اب تک یہ بات نہیں سوچی ہونگی کہ کیچپ کے استعمال کے کیا کیا فائدے اور نقصانات ہوسکتے ہیں؟ اگر اب تک نہیں معلوم تو پھرآج جان لیجئے۔

روزہ داروں کیلئے افطار کے وقت پکوڑے ہوں یا رول، سموسے ہر تلی ہوئی چیز کیچپ کے بغیر ادھوری محسوس ہوتی ہے۔

کیچپ

خاص طور پر بچے تو کیچپ کے دیوانے ہوتے ہیں بظاہر ایک عام سے پھل ٹماٹر سے بنا ہوا یہ کیچپ لذیذ تو لگتا ہے لیکن اس کو بنانے میں مختلف اشیاء کی ملاوٹ اسے صحت کے لئے نقصان دہ بھی بنا دیتی ہے۔

پھل سے بننے والا کیچپ نقصان دہ کیوں ہوتا ہے؟
اگر کیچپ میں شامل اجزاء کو غور سے پڑھا جائے تو یہ بات خود ہی سامنے آجائے گی کہ یہ ہماری صحت کے لئے نقصان دہ کیوں بن جاتا ہے۔

پہلے تو کیچپ بنانے کے لئے ٹماٹر کو اس حد تک پکایا جاتا ہے کہ اس کے منرلز اور تمام خواص ضائع ہوجاتے ہیں اس وجہ سے اس پھل کے فائدوں سے ہم محروم ہوجاتے ہیں۔ دوسری بات کہ اس کو ذائقہ دار بنانے کے لئے بہت زیادہ شکر استعمال کی جاتی ہے۔

موٹاپا اور ذیابیطس
کیچپ میں موجود ہائی فرکٹوز سیرپ اور کارن سیرپ وہ اجزاء ہیں جو سافٹ ڈرنکس میں بھی موجود ہوتے ہیں اور موٹاپے اور ذیابیطس کا باعث بنتے ہیں۔

بہتر ہے کہ کیچپ کے بجائے گھر کی سادہ چٹنیاں اور رائتے کا اہتمام کیا جائے تا کہ افطار کے فوراً بعد پیٹ کو نقصان دہ اشیاء سے بھرنے کے بجائے قدرتی غذا لی جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں