The news is by your side.

Advertisement

سانحہ مہران ٹاؤن کیس، فیکٹری سپروائزر ظفر اور ریحان گرفتار

کراچی : پولیس نے سانحہ مہران ٹاؤن کیس میں فیکٹری سپروائزرظفراورریحان کو بھی گرفتارکرلیا ، متاثرین نے سپروائزرظفر پر واقعہ میں ملوث ہونے کا الزام لگایا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کی جوڈیشل مجسٹریٹ شرقی میں سانحہ مہران ٹاؤن کیس کی سماعت ہوئی ، پولیس نے بتایا فیکٹری سپروائزرظفراورریحان کو بھی گرفتارکرلیا ہے۔

پولیس کی جانب سے گرفتارملزمان کو عدالت میں پیش کیا گیا اور تفتیشی افسرنےحتمی چالان کیلئےمہلت طلب کرلی ، جس پر عدالت نےحتمی چالان جمع کرانے کیلئے 5روز کی مہلت دے دی اورکیس کی مزیدسماعت23ستمبرتک ملتوی کردی۔

سماعت کے موقع پر سانحہ مہران ٹاؤن کے متاثرین نے سپروائزرظفرپرواقعہ میں ملوث ہونےکاالزام لگایا ، جس پر ظفر کے اہل خانہ اور دیگر متاثرین الجھ پڑے۔

گذشتہ روز کراچی کی سیشن عدالت میں مہران ٹاؤن فیکٹری آتشزدگی کیس کی سماعت ہوئی ، دوران سماعت فیکٹری مالکان ودیگر ملزمان نے ضمانت کیلئے درخواست دائر کی تھی، جس پر عدالت کا کہنا تھا کہ ملزمان کی درخواست ضمانت پرسرکاری وکیل20ستمبرکودلائل دیں گے۔

درخواست دائر کرنے والوں میں فیکٹری مالک حسن علی مہتا ،فیکٹری منیجرعمران زیدی ، چوکیدار سیدزرین اور مکان مالک فیصل طارق شامل تھے۔

واضح رہے کراچی کے علاقے مہران ٹاؤن میں چمڑا رنگنے کی فیکٹری میں خوفناک آگ بھڑک اٹھی تھی جس میں فیکٹری کے 16 ملازمین جاں بحق ہوگئے تھے۔

بعد ازاں پولیس نےواقعہ کا مقدمہ کورنگی انڈسٹریل ایریا تھانے میں درج کر کے فیکٹری کے چوکیدار، مینیجر اور سپر وائزر کو حراست میں لے لیا تھا

Comments

یہ بھی پڑھیں