The news is by your side.

Advertisement

بھارت کا گھناؤنا منصوبہ، آرٹیکل 370 کی منسوخی پر اقوام متحدہ کا اظہار تشویش

نیویارک: بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں مسلم اکثریت کو اقلیت میں بدلنے کے گھناؤنے منصوبے پر اقوام متحدہ نے شدید تشویش کا اظہار کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ وادی کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے اقدام پر اقوام متحدہ نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اقوام متحدہ بھارتی اقدام سے پیدا کشیدہ صورت حال پر نظر رکھے ہوئے ہے۔

ترجمان اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ پاک بھارت تصفیہ طلب مسائل کا مذاکرات سے حل نکالا جائے، اقوام متحدہ کے سیکٹری جنرل مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش کرچکے ہیں۔

ترجمان کے مطابق سیکریٹری جنرل تمام مسائل کا مذاکرات سے حل پر زور دے چکے ہیں، کشمیر میں عائد پابندیوں سے متعلق آگاہ ہیں، ایل او سی کے اطراف حال ہی میں فوجی نقل وحرکت میں اضافہ دیکھنے میں آیا، فریقین تحمل سے کام لیں۔

خیال رہے مقبوضہ کشمیرمیں صورتحال انتہائی کشیدہ ہے ، کشمیریوں پر زندگی تنگ کرنے کیلئے مزید اڑتیس ہزار فوجی تعینات کردیئے ہیں اور لوگ گھروں میں محصورہوکررہ گئے، کشمیریوں نے کھانے پینے کی اشیا، دوائیں اور پیٹرول جمع کرنا شروع کردیا، اس دوران لوٹ مار کی وارداتوں میں بھی اضافہ ہوا۔

مقبوضہ کشمیر میں کشیدگی، اقوام متحدہ کی پاک بھارت سے تحمل کی اپیل

کشمیری رہنما محبوبہ مفتی،عمرعبداللہ اورسجاد لون سمیت دیگر رہنماؤں کوبھی نظربند کردیاگیا ہے اور مقبوضہ وادی میں دفعہ ایک چوالیس نافدکر کےوادی میں تمام تعلیمی اداروں کو تاحکم ثانی بنداور لوگو ں کی نقل وحرکت پربھی پابندی عائد کردی گئی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں