اقوام متحدہ: حماس کے خلاف امریکی قرارداد مسترد US, Hamas
The news is by your side.

Advertisement

اقوام متحدہ: حماس کے خلاف امریکی قرارداد مسترد

نیویارک : اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی نے اسلامی مزاحمتی تنظیم حماس کے خلاف پیش کردہ امریکی قرار داد مسترد کردی۔

تفصیلات کے مطابق امریکا کی جانب سے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں غاصب صیہونی ریاست اسرائیل کی حمایت میں اسلامی مزاحمتی تنظیم کے خلاف قرار داد پیش کی گئی تھی جسے جنرل اسمبلی کے رکن ممالک نے یکسر مسترد کردیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ جنرل اسمبلی کے اجلاس میں87 رکن ممالک نے قرار کے حق میں جبکہ 57 ممالک نے قرار کے خلاف ووٹ دیا جبکہ 33 ممالک نے ووٹنگ میں حصّہ نہیں لیا۔

جنرل اسمبلی کے 33 رکن ممالک کے ووٹنگ میں حصّہ نہ لینے کے باعث قرارداد مسترد ہوگئی۔

خیال رہے کہ کسی بھی قرار داد کو منظور کروانے کےلیے 2 تہائی اکثریت ضروری ہے۔

غیر ملکی میڈیا کا کہنا ہے کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اسرائیل مخالف فلسطینی تنظیم حماس کے خلاف پیش کردہ قرارداد کےحق میں ووٹ دینے کے لیے اسرائیل نے باقاعدہ لابنگ کی تھی۔

غیر ملکی خبر رساں اداروں کا کہنا ہے کہ امریکی مندوب نکی ہیلی نے بھی اسرائیل کے ہمراہ قرارداد کی منظوری کےلیے بھرپور لابنگ کی تھی۔

امریکی مندوب نے قرارداد کی منظوری کےلیے جنرل اسمبلی کے رکن ممالک کو خط ارسال کیےتھے جس میں ووٹ نہ دینے پر دھمکی دی گئی تھی۔

جنرل اسمبلی میں اسلامی مزاحمتی تنظیم حماس کے خلاف نکی ہیلی نے قرارداد پیش تھی جو ان کی آخری قرار داد تھی، نکی ہیلی کچھ روز بعد اپنے عہدے سے سبکدوش ہورہی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں