The news is by your side.

Advertisement

عزیربلوچ تھانوں پر حملے کیس میں بھی بری

انسداد دہشت گردی کراچی کی عدالت نے گینگ وار سرغنہ عزیر بلوچ کو ایک اور کیس میں بری کر دیا۔

پیر کے روز چاکیواڑہ اور کلاکوٹ تھانے پر حملے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی تو گینگ وار سرغنہ عذیربلوچ، زبیر بلوچ اور ذاکر ڈاڈا کو عدالت میں پیش کیا گیا۔

تفتیشی افسر نے عدالت کے روبرو موقف اختیار کیا کہ 2013 میں عزیربلوچ کی ہدایت پر نامزد ملزمان نے تھانوں پر حملہ کیا تھا۔

عدالت نے تفتیشی افسر کا موقف سننے کے بعد عدم ثبوت کی بنا پر تمام ملزمان کو بری کرنےکا حکم دے دیا۔

لیاری گینگ وار کےسرغنہ عذیر بلوچ کیخلاف 64 کیسز زیرِ سماعت ہیں جس میں سے عزیر بلوچ اب تک تقریباً 18 کیسز سے بری ہو چکا ہے۔

رواں سال 4 جنوری کو انسداددہشت گردی کی عدالت نے 2 رینجرز اہلکاروں کے قتل کیس میں ملزمان عذیربلوچ کو عدم ثبوت کی بنا پر بری کردیا تھا۔

پولیس کا کہنا تھا کہ ملزموں کیخلاف پاک کالونی تھانےمیں قتل کیس کامقدمہ درج ہے، قتل کامقدمہ 2013میں درج ہوا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں