The news is by your side.

Advertisement

شواہد کی عدم فراہمی، عزیر بلوچ 2 مقدمات میں بری

کراچی: پراسیکیوشن کی جانب سے شواہد کی عدم فراہمی کے باعث لیاری گینگ وار کے سرغنہ عزیر بلوچ کو بری کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کی مقامی عدالت میں عزیربلوچ کیخلاف پولیس مقابلے، اقدام قتل کے دو مقدمات کی سماعت ہوئی، عدالت کے استفسار پر پراسکیوشن عزیر بلوچ سے متعلق شواہد پیش نہ کرسکا۔

شواہد کی عدم فراہمی پر عدالت نے دو مقدمات میں عزیر بلوچ کی بریت کی درخواست منظور کرلی، عدالت نے کلاکوٹ ،چاکیواڑہ تھانے کے دو مقدمات میں عزیر بلوچ کو بری کردیا۔ 

دو ہزار بارہ میں پولیس مقابلے،اقدام قتل کی دفعات پر عزیر بلوچ کے خلاف یہ مقدمات درج ہوئےتھے،اس کے علاوہ ملزم عزیر بلوچ کےخلاف 58 سے زائد مقدمات کراچی کی مختلف عدالتوں میں زیر سماعت ہیں۔

گذشتہ سال ماہ نومبر میں عزیربلوچ سےبرآمد راکٹ لانچر اور دھماکہ خیزمواد جل جانے کا انکشاف سامنے آیا تھا، تفتیشی افسر نے کیس پراپرٹی جلنے سے متعلق رپورٹ جمع کرائی تھی۔

یہ بھی پڑھیں:  عزیربلوچ سے برآمد راکٹ لانچر اور دھماکہ خیزمواد جل جانے کا انکشاف

بم ڈسپوزل کے اے ایس آئی نے انسداد دہشت گردی عدالت میں اپنا بیان قلمبند کراتے ہوئے بتایا تھا کہ عزیر بلوچ سے ملنے والے 3 آر پی جی سیون راکٹ ، 6 رائفل گرینڈ ،دستی بم کوناکارہ کیا گیا، عدالت نے تفتیشی افسرسے سوال کیا کہ مقدمے کےکیس پراپرٹی کہاں ہے، جس پر تفتشی افسر نے جواب دیا کہ مقدمہ کی کیس پراپرٹی جل گئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں