The news is by your side.

Advertisement

قسمت مہربان، ماہی گیر راتوں رات لکھ پتی بن گیا

گوادر: جیونی میں ایک ماہی گیر پر قسمت مہربان ہو گئی اور وہ ایک قیمتی سوا مچھلی پکڑ کر راتوں رات لکھ پتی بن گیا۔

تفصیلات کے مطابق گوادر میں غریب مچھیرے کے جال میں قیمتی سوا مچھلیاں پھنس گئیں اور اسے لکھ پتی بنا گئی۔

جیونی کی منڈی میں 21 کلو وزنی سوا مچھلی 3 لاکھ 88 ہزار 500 اور 15 کلو وزنی سوا مچھلی ایک لاکھ 39ہزار میں نیلام ہوئی۔

سوا مچھلی کی بولی فی کلو 4000 سےشروع ہوکر 18500 فی کلو تک پہنچی۔

یاد رہے گزشتہ سال بھی جیونی کے ماہی گیروں نے قیمتی مچھلیوں کا شکار کیا تھا ، ایک ماہی گیر نے 26 کلو وزنی قیمتی سوا مچھلی 6لاکھ76 ہزارروپے ، 30مئی کو بھی ایک مچھیرے کے جال میں قیمتی 48 کلو وزنی سوا مچھلی پھنسی تھی ، جو 86 لاکھ 40 ہزار میں نیلام ہوئی۔

خیال رہے کہ بلوچستان کے ساحل پر نایاب مچھلیاں بڑی تعداد میں پائی جاتی ہیں، اور مقامی ماہی گیر اکثر ایسی نایاب مچھلیوں کا شکار کرتے رہتے ہین، جن کی بین الاقوامی مارکیٹ میں بہت زیادہ قیمت ہوتی ہے۔

سوّا مچھلی کو انگریزی میں کروکر (Croaker) اور بلوچی میں کر کہا جاتا ہے، مقامی مچھیروں کو کہنا ہے کہ اس مچھلی کے شکار کے دو مہینے ہوتے ہیں اس لیے اس کو پکڑنے کے لیے ماہی گیروں کو بہت سارے جتن کرنے پڑتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں