The news is by your side.

Advertisement

آئندہ بجٹ میں عوام کے لیے کیا ہوگا؟

چیئرمین ایف بی آر عاصم احمد نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف سے بجٹ اور ٹیکس چھوٹ پر بات جاری ہے اور آئندہ مالی سال کے بجٹ میں ٹیکس چھوٹ میں کمی کی جائیگی۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو عاصم احمد نے کہا ہے کہ عوام کیلیے ٹیکس چھوٹ ختم کرنے پر آئی ایم ایف سے متفق نہیں ہونگے، آئی ایم ایف سے بجٹ اور ٹیکس چھوٹ پر بات جاری ہے، عام آدمی کے فائدے کیلیے کچھ ٹیکس جھوٹ جاری رہ سکتی ہیں۔

چیئرمین ایف بی آر نے اپنے بیان میں مزید کہا کہ ماہانہ مقررہ ٹیکس ہدف حاصل کیا جارہا ہے اور تمام کوششیں رواں مالی سال کا ٹیکس ہدف حاصل کرنے پر ہیں، نظرثانی شدہ ہدف 6100 ارب حاصل کیا جائے گا اور آئندہ مالی سال جوہدف رکھا جائےگا اسے حاصل کریں گے۔

واضح رہے کہ شہباز شریف حکومت نے آتے ہی بجٹ تیاریاں شروع کردی ہیں اور اس سلسلے میں مختلف وزارتوں کی بجٹ ترجیحات کمیٹی کا اجلاس بھی ہوچکا ہے۔

مزید پڑھیں: پاکستان اسٹاک ایکسچینج کی بجٹ کیلیے اہم تجاویز

اس کے علاوہ پاکستان اسٹاک ایکسچینج بھی اقتصادی مشکلات سے نمٹنے، قومی معیشت کو فروغ دینے اور کیپٹل مارکیٹس کی ترقی کے حوالے سے وفاقی بجٹ 2022-23 کے لیے اہم تجاویز پیش کردی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں