The news is by your side.

Advertisement

‘بدترین وقت ابھی آیا نہیں آنے والا ہے’عالمی ادارہ صحت نے دنیا کو بڑے خطرے سے خبردار کر دیا

واشنگٹن: عالمی ادارہ صحت نے دنیا کو خبردار کیا ہے کہ بدترین وقت ابھی آیا نہیں آنے والا ہے، ساری دنیا کو متحدہ ہو کر اس وائرس سے لڑنا ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس کے پیش نظرعالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے سربراہ ڈاکٹر ٹیڈرس نے ایک بار پھر دنیا کوخبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بدترین وقت ابھی آیا نہیں آنے والا ہے، کورونا ایک حقیقت ہے ،جسے لوگ سمجھ نہیں رہے۔

عالمی ادارہ صحت کا کہنا تھا کہ ساری دنیا کو متحدہ ہو کر اس وائرس سے لڑنا ہوگا، کوروناوائرس 100سال کے دوران پہلی بار آیا ہے ، 1918 میں انفلوئنزہ سے 10کروڑ افراد ہلاک ہوئے تھے۔

ادارے نے خبردار کیا ہے کہ اگر لاک ڈاؤن کی پابندیوں کو عجلت میں ہٹا دیا گیا تو اس سے وبا کے پھیلاؤ میں اضافہ ہو سکتا ہے، جب تک اس وبا کے خلاف ویکسین دریافت نہیں ہوتی تب تک وبا کے خلاف احتیاطی تدابیر کا طریقہ اپنانا ہو گا۔

گذشتہ روز رہے ڈی جی ڈبلیوایچ اوڈاکٹرٹیڈروس نے کہا تھا کہ پہلے دن سے امریکا سے کچھ نہیں چھپایا گیا، ہم نےتمام ملکوں کوفوری پیغام دیئےتاکہ تیاری کرسکیں، عالمی ادارہ صحت میں کچھ نہیں چھپایاجاتا، یہ زندگیوں کامعاملہ ہے،ایک جان بھی بہت قیمتی ہے۔

یاد رہے چند روز قبل عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے سربراہ ڈاکٹر ٹیڈرس نے اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ لاک ڈاؤن میں نرمی بہت خطرناک ثابت ہوگی جس سے اموات میں تیزی آ سکتی ہے، کئی ممالک میں معاشی مشکلات ہیں لیکن تمام ممالک کو لاک ڈاؤن میں نرمی سے متعلق بہت ہی احتیاط کرنی چاہیے۔

عالمی ادارہ صحت کے چیف کا کہنا تھا یورپی ممالک میں عالمی وبا کے کیسز میں کچھ کمی آئی ہے جو کہ خوش آئند ہے، تاہم افریقا سمیت دوسرے ممالک میں کورونا کیسز بہت تیزی سے بڑ ھ رہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں