The news is by your side.

Advertisement

یوم آزادی کی تقریبات کے دوران کابل میں 14 راکٹ حملے

کابل: افغانستان کا دارالحکومت یوم آزادی کی تقریبات کے دوران راکٹ حملوں سے گونج اٹھا، شدت پسندوں نے 14 راکٹ فائر کیے جس کے نتیجے میں بچوں اور خواتین سمیت کئی افراد زخمی ہوگئے۔

افغان میڈیا کے مطابق کابل کے مختلف علاقوں میں 14 راکٹ داغے گئے، یہ حملے ایسے وقت میں ہوئے کہ جب ملک بھر میں آزادی کی تقریبات منعقد کی جارہی ہیں، افغانستان میں یوم آزادی کل (19 اگست) کو منائی جائے گی۔

افغان وزارت داخلہ نے تصدیق کی ہے کہ حملے میں ملوث 2مشتبہ افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

افغان حکومت نے 400 طالبان قیدیوں کی رہائی کا عمل شروع کر دیا

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ راکٹ گاڑیوں میں نصب تھے اور شدت پسند چلتی گاڑی سے فائر کررہے تھے، تمام زخمیوں کو مقامی اسپتالوں میں منتقل کردیا گیا ہے جہاں انہیں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔

طالبان سمیت کسی دہشت گرد تنظیم نے تاحال حملے کی ذمے داری قبول نہیں کی۔

بین الاقوامی تعلقات کے ماہرین کا کہنا ہے کہ ان حملوں سے بین الافغان مذاکرات متاثر ہوسکتے ہیں، افغان حکومت کی جانب سے 400 طالبان قیدیوں کے رہائی کے اعلان کے بعد مذکورہ حملے تشویش کا باعث ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں