The news is by your side.

Advertisement

قدیم قبیلہ جہاں نسل در نسل خواتین کی حکومت تھی

جدید دور میں کئی ممالک میں حکمرانی کا منصب خواتین کے پاس ہے، تاہم جب بات نسل در نسل حکمرانی کی ہو، تو ایسے میں اقتدار باپ سے بیٹے کو منتقل ہوتا ہے اور خاندان کی شناخت بھی باپ کے نام سے ہی ہوتی ہے۔

تاہم آج سے کئی صدیاں قبل ایک قبیلہ ایسا بھی تھا جہاں حکمرانی عورت کے ہاتھ میں ہوا کرتی تھی اور نسل در نسل خواتین کو ہی منتقل ہوتی تھی۔

شمالی امریکی ملک میکسیکو میں ایک ایسے قبیلے کے آثار دریافت ہوئے ہیں جو نظام مادر پر مشتمل تھا اور وہاں کی حکمرانی خواتین کے ہاتھ میں تھی۔

اب سے تقریباً ایک ہزار سال موجود یہ قبیلہ پتھر کے گھروں میں رہا کرتا تھا اور ہر گھر میں بے شمار کمرے ہوا کرتے تھے۔ چاکوان نامی یہ قبیلہ 800 سے 1130 عیسوی کے درمیان موجود تھا۔

کھنڈرات سے ملنے والی انسانی باقیات کے تجزیے کے بعد ماہرین کو علم ہوا کہ یہاں حکمرانی کا منصب خواتین کے پاس تھا جو ماں سے بیٹی اور بعد ازاں اس کی بیٹی کو منتقل ہوتا تھا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ان کھنڈرات سے کسی قسم کا تحریری مواد نہیں مل سکا اس لیے ان کے بارے میں زیادہ تر معلومات اندھیرے میں ہیں۔

ماہرین آثار قدیمہ نے اس قبیلے کو اپنی ابتدائی شکل میں مکمل طور پر مستحکم نظام پر مشتمل معاشرہ قرار دیا ہے۔

مزید پڑھیں: خواتین کے نام سے چلنے والا شجرہ نسب


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں