The news is by your side.

Advertisement

باغ سَر کا قلعہ دیکھیے، جھیل کی سیر کیجیے

اگر آپ آزاد کشمیر گئے ہوں‌ تو باغ سَر جانے کا اتفاق بھی ہوا ہو گا جو خوب صورت اور تاریخی مقامات کی وجہ سے بھی مشہور ہے۔

وادی کے ضلع بھمبر کی طرف سطحِ سمندر سے 975 میٹر کی بلندی پر ایک جھیل ہے جو ’’باغ سر جھیل‘‘ کے نام ہی سے پہچانی جاتی ہے، لیکن اس جھیل کا نظارہ کرنے کے لیے آپ کو اس قلعے کے دامن میں پہنچنا ہو گا جو خود بھی تاریخی اہمیت کا حامل ہے۔

مشہور ہے کہ شہنشاہ جہانگیر دورۂ کشمیر پر تھا تو بیمار ہوا اور باغ سر ہی میں وفات پائی۔ شہنشاہ کی موت کے بعد اس کا جسدِ خاکی باغ سر سے لاہور لے جایا گیا تھا۔

باغ سَر دراصل قدرتی حسن سے مالا مال علاقہ ہے جہاں‌ یہ قلعہ اور اس کے دامن میں‌ واقع جھیل بہت مشہور ہے اور یہ اسی علاقے کے نام سے منسوب مقام ہیں۔ کہتے ہیں‌ قلعہ باغ سَر میں‌ کئی بادشاہوں‌ نے قیام کیا اور اس علاقے کی آب و ہوا اور فطرت سے لطف اندوز ہوئے۔

قلعے میں‌ موجود جھیل اس کے حسن کو دوبالا کرتی ہے اور یہ تقریبا نصف کلومیٹر طویل ہے۔ اس علاقے میں‌ مغل دور کے تعمیر کردہ کئی باغات بھی موجود ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں