The news is by your side.

Advertisement

ترکی میں کاربم دھماکہ،18افراد جاں بحق

انقرہ : ترکی کے جنوب مشرقی حصے میں فوجی چیک پوسٹ پرکاربم حملے کے نتیجے میں دس فوجیوں سمیت اٹھارہ افراد جان کی بازی ہارگئے۔

تفصیلات کےمطابق اتوار کےروز ترکی کے صوبےھکاری میں سرحد کے قریب دورک کے مقام پر دھماکہ ہواجب چیک پوسٹ پر فوجیوں نے ایک کار کو تلاشی کے لیے روکا جس میں 18افراد جاں بحق ہوگئے۔

صوبائی گورنر کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں نے پہلے چیک پوسٹ پر تعینات فوجیوں پر فائرنگ کی اور بعد میں منی وین کو دھماکے سے اڑا دیاجسکت نتیجے میں 18افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہوگئے۔

دوسری جانب ترک وزیراعظم نے استبول میں پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران کہا کہ ملک کے شمال مشرقی صوبے میں ہونے والے بم دھماکے میں 18 افراد ہلاک ہوئے،جن میں 8 شہری شامل ہیں۔

بن علی یلدرم کا کہنا تھا کہ ایک وین میں 5 ٹن دھماکا خیز مواد موجود تھا جسے خود کش بمبار نے زور دار دھماکے سے اڑا دیا۔

مزیدپڑھیں:ترکی میں 2خودکش حملہ آوروں نے خود کو دھماکے سے اڑالیا

خیال رہے کہ گذشتہ سال ترکی اور کرد باغیوں کے درمیان جنگ بندی کے معاہدے کے خاتمے کے بعد سے کرد جنگجو تنظیم ’پی کے کے‘ نے ترک سکیورٹی فورسز کو متعدد مرتبہ نشانہ بنایا ہے۔

یاد رہے کہ ترک حکومت کی جانب سےگذشتہ 2 ماہ سے صوبے ھکاری میں فوجی آپریشن کے دوران پی کے کے کے 387 جنگجو ہلاک ہوچکےہیں۔

مزید پڑھیں: ترکی میں بغاوت کی کوشش عوام نے ناکام بنادی، 250 سے زائد افراد ہلاک

واضح رہےکہ یاد رہے کہ رواں برس 15 جولائی کو ترک صدر طیب اردگان کی حکومت کا تختہ الٹنے کے لیے ہونے والی فوجی بغاوت میں ناکامی کے بعد سے ترکی میں ایمرجنسی نافذ ہے اور بغاوت کی سازش میں ملوث افراد کے خلاف کریک ڈاؤن کا سلسلہ جاری ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں