The news is by your side.

Advertisement

کرونا ویکسین: چین نے وبا کے خاتمے کی امید پیدا کر دی

بیجنگ: چینی حکومت نے ممکنہ کروناویکسین کی انسانوں پر تجربے کی اجازت دے دی جس کے بعد ویکسین کمپنی جلد انسانوں پر آزمائش کا مرحلہ وار سلسلہ شروع کرے گی۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق حکومت نے ’شھونگ کوئن ژیفی‘ نامی کمپنی کو اپنی ممکنہ کرونا ویکسین کی انسانوں پر تجربے کی اجازت دی ہے۔ مذکورہ ویکسین ’اینہوئی ژیفی لونگ کام‘ اور ’انسٹی ٹیوٹ آف مائیکروبائیولوجی‘ کمپنی کے تعاون سے تیار کی گئی ہے۔

دونوں کمپنی نے ممکنہ ویکسین کی تیاری میں ’شھونگ کوئن ژیفی‘ کا ہرممکن ساتھ دیا۔

ایک اور ملک نے کرونا ویکسین دریافت کرنے کا دعویٰ کر دیا

رپورٹ کے مطابق چینی قومی ادارہ برائے صحت نے کمپنوں کو خصوصی طور پر اجازت نامہ ارسال کیا ہے جس کے تحت اب انہیں اپنی ممکنہ ویکسین کی انسانوں پر ٹرائل کرنے کی اجازت ہوگی۔

اس کے علاوہ چین میں دیگر کمپنیاں اور ماہرین بھی ویکسین کی تیاری میں جٹے ہوئے ہیں اور 6 سے زائد طبی ادارے ممکنہ ویکسین کی مختلف قسم کے ٹرائل کررہے ہیں۔ جبکہ دنیا بھر میں درجنوں ادارے کرونا کا علاج دریافت کررہے ہیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز افریقی ملک نائجیریا کے سائنس دانوں نے کرونا ویکسین کی دریافت کا دعویٰ کیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں