The news is by your side.

Advertisement

سرحد پار سے فائرنگ، 2 جوان شہید، 3 دہشتگرد ہلاک

پاک افغان بارڈر پر باجوڑ میں فوجی چوکی پر سرحدپار سےفائرنگ کے تبادلے میں 3 دہشتگرد ہلاک جب کہ پاک ‏فوج کے 2 جوان شہید ہوگئے۔ ‏

آئی ایس پی آر کے مطابق دہشت گردوں نے افغان علاقےسے باجوڑ میں قائم فوجی چوکی کونشانہ بنایا تو پاک ‏فوج نے دہشت گردوں کی فائرنگ کا بھرپور جواب دیا۔ ‏

خفیہ اطلاعات کےمطابق جوابی کارروائی میں 3 دہشت گرد مارےگئے اور 4 زخمی ہوئے جب کہ فائرنگ ‏کے تبادلے میں پاک فوج کے2جوان شہید ہو گئے۔

شہید سپاہی جمال کا تعلق مردان اور شہیدسپاہی ایاز کا تعلق چترال سے ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق پاکستان نے افغان سرزمین سےدہشت گرد حملے پر شدید احتجاج کیا اور باور کرایا ہے ‏کہ افغانستان کی سرزمین پاکستان کےخلاف کسی صورت استعمال نہ ہو۔

وزیرداخلہ شیخ رشید نے سرحدپار سے دہشت گرد کارروائی کی مذمت کرتے ہوئے فائرنگ سے سپاہی جمال اور ‏سپاہی ایاز کی شہادت پر دکھ کا اظہار کیا ہے۔ شیخ رشید نے وطن کی خاطرجان قربان کرنےوالےجوانوں کو خراج ‏عقید بھی پیش کیا ہے۔

واضح رہے کہ وقتاً فوقتاً سرحد پار سے فائرنگ کے واقعات پیش آتے رہتے ہیں جس کی روک تھام ‏کے لیے پاکستان مسلسل بارڈر پر سیکورٹی کو مضبوط بنانے اور مربوط منیجمنٹ پر زور دیتا آ رہا ‏ہے۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ بھی واضح کر چکے ہیں کہ پاکستان اورافغانستان کاامن ایک ‏دوسرے سے ‏وابستہ ہے دشمنوں کو امن عمل کو متاثر کرنےکی اجازت نہیں دیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ مؤثربارڈر مینجمنٹ اور سیکیورٹی دونوں ملکوں کے مفاد میں ہے دونوں ممالک ‏‏علاقائی رابطوں سے فائدہ اٹھاسکتےہیں افغانستان میں پائیدارامن سےخطےمیں ترقی ہوگی اور پاک ‏‏افغان یوتھ فورم سےباہمی رابطوں کو فروغ ملےگا پاک افغان نوجوان خطےکامستقبل ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں