The news is by your side.

Advertisement

میجر شبیر شریف شہید جرأت و بہادری کے عظیم پیکر تھے: ترجمان دفتر خارجہ

اسلام آباد: دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر فیصل نے ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ میجر شبیر شریف شہید جرات و بہادری کے عظیم پیکر تھے۔

تفصیلات کے مطابق میجر شبیر شریف شہید نشان حیدر کے یوم ولادت پر ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان اپنےعظیم سپوت کو خراج عقیدت پیش کرتا ہے۔

ڈاکٹرمحمد فیصل نے ٹویٹ میں کہا کہ میجر شبیر شریف شہید جرأت و بہادری کے عظیم پیکر تھے، ہیرو کبھی نہیں مرتے۔

خیال رہے کہ آج 1971 کی جنگ میں دشمن بھارت کے دانت کھٹے کرنے والے میجر شبیر شریف شہید کا 76 واں یوم ولادت منایا جا رہا ہے، میجر شریف شہید وہ واحد شخصیت ہیں جنھیں نشان حیدر اور ستارۂ جرات سے نواز گیا۔

یہ بھی پڑھیں:  میجرشبیرشریف شہید کا یوم ولادت آج منایا جا رہا ہے

میجر شبیر شریف 28 اپریل 1943 کو گجرات میں پیدا ہوئے، انھوں نے 21 سال کی عمر میں 1964 میں پاک فوج میں شمولیت اختیار کی، وہ شروع ہی سے وطن عزیز پر جان قربان کرنے کا جذبہ رکھتے تھے۔

میجر شبیر اور ان کے ساتھیوں نے ہیڈ سلیمانکی کے مقام پر بھارتی فوج کا حملہ ناکام بنایا تھا، انھوں نے دشمن کے 43 سپاہیوں کو ہلاک اور 28 کو قیدی بنایا اس کے علاوہ دشمن کے 4 ٹینک بھی تباہ کیے۔

میجر شبیر شریف نے 6 دسمبر 1971 کو دشمن بھارتی فوج سے بے جگری کے ساتھ لڑتے ہوئے جام شہادت نوش کیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں