The news is by your side.

Advertisement

نہر سوئز : جہازوں کی بندش کے نقصان کا ازالہ کون کرے گا؟

قاہرہ : مصر کی نہر سوئز میں دیو ہیکل مال بردار بحری جہاز پھنسنے کے باعث پیر کی دوپہر تک بند رہنے کی تحقیقات جلد شروع ہونے کی توقع ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق بحری جہاز ایور گرین کو نکالنے کے بعد نہر میں چھ روز کے وقفے کے بعد بحری جہازوں کی نقل و حمل دوبارہ شروع ہو گئی ہے، بحری جہاز ایور گرین جاپانی کمپنی کی ملکیت ہے جسے تائیوان کی ایک کمپنی چلا رہی ہے۔

بحری جہازوں کی نقل و حرکت کی نجی ویب سائٹ ویسل فائنڈر کے مطابق نہر میں یا اس کے ارد گرد سمندر میں کھڑے بحری جہازوں نے نقل و حرکت شروع کر دی ہے لیکن سوئز کینال اتھارٹی کے مطابق حالات معمول کی جانب لوٹنے میں مزید کئی دن لگ سکتے ہیں۔

سوئز کینال اتھارٹی کے چیئرمین اوسامہ ربیع نے واقعے کی تحقیقات کرانے کا عندیہ دیا ہے۔ انہوں نے میڈیا کو بتایا ہے کہ تحقیقات میں اس حادثے کے ذمہ داروں کی نشاندہی کی جائے گی اور معاوضے کی ادائیگی کرنے والے فریقوں کا تعین کیا جائے گا۔

مزید پڑھیں : نہر سوئز ، ریت میں پھنسا ہوا بحری جہاز نکال لیا گیا، ٹریفک بحال

دنیا کی مصروف ترین تجارتی گزرگاہوں میں شامل اس گزرگاہ کی چھ روزہ بندش سے سامان کی عالمی ترسیل متاثر ہوئی ہے اور اس نہر کے محصولات پر بھاری انحصار کرنے والی مصر کی حکومت کو خاطر خواہ نقصان برداشت کرنا پڑا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں