The news is by your side.

Advertisement

پی آئی سی بند ہونے سے امراض قلب کے مریض دربدر، ایمرجنسی آج کھولنے کا فیصلہ

لاہور: پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی بند ہونے کی وجہ سے امراض قلب میں مبتلا مریض در بہ در ہو گئے ہیں، جس کے سبب حکومت نے آج رات سے پی آئی سی کی ایمرجنسی کو کھولنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی آئی سی بند ہونے کی وجہ سےامراض قلب کے مریض در بہ در ہو گئے ہیں، مریضوں کو آج مختلف ٹیسٹوں اور انجیو گرافی کی تاریخیں ملی ہوئی تھیں، تاہم دور دراز سے آئے مریض جب اسپتال پہنچے تو دروازے بند ملے۔

کارڈیالوجی میں مریضوں کو کئی مہینوں کا وقت دیا جاتا ہے، اپنی تاریخ پر پی آئی سی پہنچنے والے مریضوں کا کہنا تھا کہ انھیں آج ٹیسٹ کی تاریخ ملی تھی لیکن اندر نہیں جانے دیا جا رہا، ایک مریضہ نے اے آر وائی نیوز کے نمایندے کو بتایا کہ ان کے سینے میں درد ہے لیکن اسپتال میں داخل نہیں ہونے دیا جا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  پی آئی سی حملہ کیس؛ گرفتار وکلا کو جوڈیشل ریمانڈ پر بھیج دیا گیا

ادھر پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کی ایمرجنسی کو آج رات سے کھولنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے، پی آئی سی کی ایمرجنسی میں مرمت کا تمام کام بھی مکمل کیا جا چکا ہے، بیڈز کو ترتیب سے لگا دیا گیا، آئی سی یو میں وینٹی لیٹرز اور دیگر مشینری بھی ترتیب سے لگا دی گئی ہے۔

اسپتال ذرایع کا کہنا ہے کہ آج رات ایمرجنسی کو مریضوں کے لیے کھول دیا جائے گا، جب کہ اِن ڈور اور آؤٹ ڈور کی سروسز کل سے شروع ہونے کا امکان ہے۔

یاد رہے دو دن قبل وکیلوں نے کالے کوٹوں میں ملبوس پی آئی سی پر دھاوا بول کر شدید توڑ پھوڑ کی تھی اور اسپتال کو بے پناہ نقصان پہنچا دیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں