The news is by your side.

Advertisement

مقامی انتخابات میں شکست کے بعد اردوآن پارٹی میں اپنے مخالفین پر برس پڑے

انقرہ : ترکی کے صدر رجب طیب اردوآن مارچ کے آخر میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں شکست کے بعد حکمراں جماعت آق میں موجود اپنے مخالفین پر برس پڑے اور انہیں سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے لگے۔

تفصیلات کے مطابق اردوآن اور ان کے مقربین کا خیال ہے کہ بلدیاتی انتخابات میں بڑے شہروں میں ان کی شکست غیر محدود گروپوں کی دھاندلی کا نتیجہ ہے۔

اردوآن اور ان کے حامیوں کی طرف سے انتخابی نتائج پر شکایات کے انبار لگا دئیے گئے، پارٹی اجلاس سے خطاب میں صدر طیب اردوآن نے کسی لیڈر کانام لیے بغیر کہا کہ ہمیں ایک ہی وقت میں خارجی اور داخلی محاذوں پر لڑائی کا سامنا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ ایک طرف ہم بیرون ملک گروپوں سے لڑرہے ہیں اور دوسری طرف ہمارے درمیان (مراد آق پارٹی) کے اندر ایسے لوگ موجود ہیں جو ہمیں نیچا دکھانا چاہتے ہیں۔

انہوں نے ہمیں مایوس اور رسوا کرنے کی کوشش کی ہے، انہوں نے پارٹی میں موجود اپنے سیاسی مخالفین کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہم جانتے ہیں کہ انتخابات کے دوران کس صوبے اور کس ریاست میں کیا ہوا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق صدر اردوآن کا کہنا تھا کہ اس پارٹی میں رہتے ہوئے جن لوگوں نے دھاندلی کی کوشش کی انہیں اپنا محاسبہ کرنا اور اپنے افعال کا خود ذمہ دار ہونا ہوگا۔

صدر اردوآن کا کہنا تھا کہ وہ پارٹی میں موجود ایسے افراد کے خلاف سخت کارروائی کریں گے جو بلدیاتی انتخابات میں ناکامی کے ذمہ دار ہیں، تاہم صدر اردوآن نے یہ واضح نہیں کیا کہ آیا وہ اپنی جماعت میں موجود سیاسی مخالفین کے خلاف کس قسم کی قانونی چارہ جوئی کریں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں