The news is by your side.

Advertisement

ایران کے ساتھ جوہری معاہدہ برقرار رکھیں گے، یورپی رہنماؤں کا عزم

پیرس: امریکا کے اتحادی یورپی ملکوں فرانس، برطانیہ اور جرمنی نے اعلان کیا ہے کہ وہ ایران کے ساتھ جوہری معاہدہ برقرار رکھیں گے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق یورپی حکام کا کہنا ہے کہ فرانس، برطانیہ اور جرمنی کے اعلیٰ حکام سے ملاقات طے پاگئی ہے، جس میں مستقبل میں معاہدے پر عملدرآمد جاری رکھنے کے طریقے کار پر بات کی جائے گی۔

مشترکہ بیان میں پانچوں ملکوں نے کہا ہے کہ انہیں امریکی فیصلے پر تشویش اور تحفظات ہیں، فرانس کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکا کے نکلنے سے معاہدہ ختم نہیں ہوا بدستور برقرار ہے، فرانسیسی صدر ایرانی ہم منصب سے ٹیلی فون پر گفتگو کریں گے تاکہ معاہدے کے مستقبل پر بات چیت کی جاسکے۔

فرانسیسی وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ ایران معاہدے میں درج شرائط کی پابندی کررہا ہے اور اس کے باوجود معاہدے سے امریکا کے نکلنے سے خطے میں عدم استحکام کا خدشہ ہے۔

یورپی یونین کا کہنا ہے کہ وہ معاہدے پر کاربند رہے گی اور اس بات کو یقینی بنائے گی کہ جب تک ایران جوہری معاہدے پر عمملدرآمد کررہا ہے، اس پر وہ اقتصادی پابندیاں دوبارہ عائد نہ کی جائیں جو معاہدے سے قبل نافذ تھیں۔

جرمنی کے وزیر خارجہ ہائیکو ماس نے ٹرمپ کے اعلان پر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ یہ بالکل واضح نہیں کہ امریکی حکام کے ذہن میں معاہدے کے متبادل کے طور پر کیا چل رہا ہے۔

امریکا کا قریب ترین یورپی اتحادی برطانیہ پہلے ہی ایران کے ساتھ جوہری معاہدہ برقرار رکھنے کی حمایت کرچکا ہے، برطانوی وزیر خارجہ بورس جانسن نے رواں ہفتے اس معاملے پر امریکی حکام سے بات چیت کے لیے واشنگٹن ڈی سی کا دورہ بھی کیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں