site
stats
عالمی خبریں

کرپشن کا الزام: برازیل کےسابق صدرکوساڑھےنوسال قید کی سزا

برازیلیا: برازیل کے سابق صدرکو کرپشن کے الزامات پر مجرم قرار دیتے ہوئے ساڑھے نو سال قید کی سزا سنادی گئی۔

تفصیلات کےمطابق برازیل کے سابق صدرلوئیز لولا ڈی سلوا پرالزام ہےکہ انہوں نےآئل کمپنی پیٹروبراس میں بدعنوانی کےحوالے سے رشوت کےطورپرایک اپارٹمنٹ لیا تھا۔

برازیل کے سابق صدر نے ان دعووں کو مسترد کر دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ان کے خلاف یہ مقدمہ سیاسی بنیادوں پر قائم کیا گیا ہے۔

خیال رہےکہ لوئیز لولا ڈی سلوا دو مرتبہ برازیل کے صدر منتخب ہوئے تھے اور انیوں نے یہ عہدہ سنہ 2011 میں چھوڑا تھا۔

برازیل کے سابق صدر کے وکلا کاکہناہے کہ ان کے موکل بے قصور ہیں اور وہ اس کے خلاف ایپل کریں گے۔


برازیل کی سابق صدرعہدے سے برطرف


یاد رہےکہ گزشتہ سال ستمبر2016 کوبرازیل کی سابق صدر جلما روسیف کو سینیٹ نےان کے عہدے سے برطرف کر دیاتھا۔روسیف پر ملک کے بجٹ کے اعداد وشمار میں ہیرا پھیری کا الزام تھا۔

واضح رہے کہ جلما روسیف سنہ 2011 میں برازیل کی پہلی خاتون صدر بنیں اور 2014 میں دوبارہ صدارتی انتخابات جیت کر صدر منتخب ہوئی تھیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top