The news is by your side.

Advertisement

وفاقی حکومت نے لاک ڈاؤن میں 9 مئی تک توسیع کردی

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن میں 9 مئی تک توسیع کردی گئی ہے، لاک ڈاؤن میں فوج کی مدد بھی شامل ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر نے نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ 9 مئی تک موجودہ صورتحال برقرار رکھی جائے گی، کوشش کرنی ہے ہمارے ذریعے کسی اور تک بیماری نہ پہنچے، کرونا سے متعلق بداحتیاطی میں تھوڑا اضافہ ہوا ہے، پاک فوج سول انتظامیہ کی بھرپور مدد کررہی ہے۔

اسد عمر نے کہا کہ مئی کا مہینہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ سے متعلق فیصلہ کن ہے، مئی میں کرونا کے پھیلاؤ پر قابو پالیا تو عید کے بعد صورتحال بہتر ہوگی، احتیاطی تدابیر پر عمل کیا تو عید کے بعد روزگار بندشوں کو بہتر کرسکیں گے، عام زندگی کی طرف واپسی کے لیے احتیاطی تدابیر پر عمل کرنا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ رمضان کا مہینہ فیصلہ کن ہے، رمضان میں سحر اور افطار میں کوئی لوڈ شیڈںگ نہیں ہوگی، احساس ایمرجنسی ریلیف پروگرام رمضان میں بھی جاری رہے گا، 57 لاکھ خاندانوں میں امدادی رقوم تقسیم کی جاچکی ہیں، 69 ارب روپے مستحق خاندانوں میں تقسیم کیے جاچکے ہیں۔

دوسری جانب تاجر رہنماؤں کے وفد نے وزیر منصوبہ بندی اسد عمر اور وزیر مملکت حماد اظہر سے ملاقات کی، وفد کی سربراہی اسلام آباد چیمبر آف کامرس کے صدر محمد احمد نے کی، صدر اسلام آباد چیمبر آف کامرس کا کہنا تھا کہ بزنس کمیونٹی کرونا کے باعث پابندیوں پر سختی سے عمل پیرا ہے۔

تاجروں کے وفد نے معیشت کے پیش نظر مختلف سفارشات پیش کیں، وفد نے اسد عمر کو مختلف کاروباری اداروں کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ تاجروں کی سفارشات پر مناسب غور کیا جائے گا، حکومت کرونا کے باعث تاجر برادری کے چیلنجز کو تسلیم کرتی ہے، لوگوں کی مشکلات کو دور کرنے کے لیے ہر ممکن کوشش کی جارہی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں