The news is by your side.

Advertisement

فارن فنڈنگ کیس: الیکشن کمیشن نے بڑا حکم نامہ جاری کردیا

اسلام آباد: پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس میں الیکشن کمیشن نے فریقین کو جوابات جمع کرانے کے لیےآخری بار وقت دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق چیف الیکشن کمشنر کی زیر صدارت تین رکنی کمیشن نے پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس کی سماعت کی ، درخواست گزار اکبر ایس بابر اور وزیر مملکت برائے اطلاعات فرخ حبیب الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے۔

پی ٹی آئی کی جانب سے الیکشن کمیشن کو بتایا گیا کہ وکیل سپریم کورٹ میں مصروف ہونے کے باعث الیکشن کمیشن کے روبرو پیش نہیں ہوسکتے ،لہذا انور منصور کے سپریم کورٹ سے واپس آنے تک سماعت ملتوی کی جائے۔

جس پر چیف الیکشن کمشنر نے ریمارکس آج کی سماعت کی تاریخ مشاورت سے رکھی گئی تھی۔ اکبر ایس بابر کے وکیل نے کہا کہ پی ٹی آئی آج سے پہلے بھی بیشتر التوا کی درخواست دائر کرچکی ہے، کیسز تو روز لگتے رہیں گے۔

چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ درخواستگزار اور پی ٹی آئی کی جانب سے جواب الیکشن کمیشن کو موصول نہیں ہوئے۔ وکیل اکبر ایس بابر نے کہا کہ ہمیں ریکارڈ لیٹ ملا، تیاری کے لیے 20 دن چاہیے ہونگے۔ممبر سندھ الیکشن کمیشن نے اکبر ایس بابر کے وکیل سے کہا کہ آپ بھی دلائل دینے کے لیے تیار نہیں ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس میں اہم پیش رفت

بحث کو سمیٹتے ہوئے چیف الیکشن کمشنر نے وکیل اکبر ایس بابر کو مخاطب کیا اور کہا کہ آپ نے اور پی ٹی آئی نےاب تک جوابات جمع نہیں کرائے، آپ کے پاس جوبھی ہے،آپ اس کا جواب جمع کرائیں،بعد ازاں الیکشن کمیشن نےفارن فنڈنگ کیس کی مزید سماعت یکم مارچ تک ملتوی کردی۔

دوسری جانب وزیر مملکت فرخ حبیب نے اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ن لیگ اور پیپلزپارٹی کے اکاؤنٹس کے حوالے سے اسکروٹنی کمیٹی کو ابھی فعال نہیں کیا گیا، مریم نواز، بلاول اپنے اکاؤنٹس کا حساب دیں، امریکا، برطانیہ میں جو انہوں نے کمپنیاں بنا رکھی ہیں۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ پیپلزپارٹی اور ن لیگ کی کوشش ہوتی ہے قانون، احتساب اور الیکشن کمیشن سے بھاگیں، الیکشن کمیشن کا کام ہے فیصلہ کرنا، ہم چاہتے ہیں تمام سیاسی جماعتوں کے فنڈز کے کیسز کا فیصلہ ہو۔

Comments

یہ بھی پڑھیں