The news is by your side.

Advertisement

محرم قوانین پر عمل نہ کرنے والی خواتین عازمین حج کیلئے اہم فیصلہ

ریاض: سعودی حکومت نے میں رواں برس حج کے لیے آنے والی خواتین کے لیے محرم کے قانون پر سختی سے عمل کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی حکام نے حج کیلئے آنے والی 45 سال سے کم عمر خواتین کے لیے محرم کا ساتھ ہونا لازمی قرار دے دیا ہے، اس حوالے سے سول ایوی ایشن اتھارٹی نے باضابطہ نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا ہے۔

نوٹیفیکیشن میں کہا گیا ہے کہ محرم کے بغیر آنے والی خواتین کو حج کیلئے مملکت میں داخلے کی اجازت نہیں ہوگی، قانون پر عمل نہ کرنے والی خواتین کو مملکت پہنچتے ہی فوری طور پر بے دخل کردیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: خواتین عازمین حج کیلئے نئی شرط عائد

سعودی سول ایوی ایشن نے تمام فضائی کمپنیوں کو بھی ہدایات جاری کردی ہیں، جس میں کہا گیا ہے کہ 45 سال سے کم عمر کی خواتین کو پروازوں میں سوار نہ کیا جائے جب تک کہ ان کے حج ویزا پر درج مرد سرپرست ان کے ساتھ نہ ہوں۔

حکام کا کہنا ہے کہ خلاف ورزی کی صورت میں خواتین کو اسی پرواز سے ڈی پورٹ کر دیا جائے گا، جبکہ کوتاہی کرنے والی کمپنیوں پر جرمانہ بھی عائد کیا جا سکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں